کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے کے بعد کیسا محسوس ہوتا ہے؟ صحت مند ہونے کے بعد متاثرہ مریضوں نے انتہائی حیران کن انکشاف کردیا

کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے کے بعد کیسا محسوس ہوتا ہے؟ صحت مند ہونے کے بعد ...
کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے کے بعد کیسا محسوس ہوتا ہے؟ صحت مند ہونے کے بعد متاثرہ مریضوں نے انتہائی حیران کن انکشاف کردیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے کے بعد کیسا محسوس ہوتا ہے؟ اس موذی وباءسے جنگ جیتنے والے مریضوں نے اس سوال کا حیران کن جواب دے دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق ان صحت مند ہونے والے برطانوی مریضوں نے بتایا ہے کہ اس وباءکی وجہ سے ان کا جسم انتہائی لاغر اور کمزور ہو گیا اور صحت یاب ہونے کے بعد بھی ایک ہفتے تک انہیں کھانسی لاحق رہی۔ حتیٰ کہ کئی لوگوں نے بتایا کہ صحت یابی کے بعد بھی ایک ہفتے تک انہیں سانس لینے میں شدید دشواری کا سامنا رہا۔

40سالہ سائیکلسٹ ڈینی شوشمین کا کہنا تھا کہ ”کورونا وائرس سے صحت یابی کے بعد میرے جسم میں اتنی بھی توانائی نہیں رہی کہ اپنی سائیکل پر سوار ہو کر باہر جا سکوں۔ “ پرائمری سکول ٹیچر بریان میفین نے بتایا کہ ”صحت یاب ہونے اور ہسپتال سے ڈسچارج ہونے کے ایک ہفتہ بعد تک مجھے شدید کھانسی لاحق رہی اور میرا جسم اس قدر کمزور ہو گیا تھا کہ میں سیڑھیاں بھی نہیں چڑھ سکتا تھا۔“مانچسٹر کے اینڈریو نامی شخص نے بتایا کہ ”ریکوری کے بعد بھی مجھے سانس لینے میں شدید دقت کا سامنا رہا اور بدن میں توانائی نہ ہونے کے برابر تھی۔“

ماہرین کا کہنا ہے کہ ”جن مریضوں میں کورونا وائرس کی علامات شدید ہو جائیں ان میں نقاہت کئی ہفتے یا مہینے تک چل سکتی ہے۔ ان کے پھیپھڑوں کو بھی اتنا نقصان پہنچ سکتا ہے کہ انہیں مکمل صحت یاب ہونے میں مہینوں لگ سکتے ہیں اور تب تک انہیں سانس لینے میں دشواری رہ سکتی ہے۔ تاہم یہ صورتحال ان لوگوں میں ہوتی ہے جن میں علامات زیادہ سنگین ہو جائیں۔“

مزید :

برطانیہ -