ملتان: کرونا سے مزید 1مریض جاں بحق، مجموعی ہلاکتیں 542ہوگئیں 

ملتان: کرونا سے مزید 1مریض جاں بحق، مجموعی ہلاکتیں 542ہوگئیں 

  

ملتان، جام پور، راجن پور، خانیوال، مظفر گڑھ (وقائع نگار، نامہ نگار، ڈسٹرکٹ رپورٹر، نمائندہ پاکستان، بیورو رپورٹ، تحصیل رپورٹر) نشتر ہسپتال ملتان میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا میں   مبتلا مریض جاں بحق ہوگیا،اموات کی مجموعی  تعداد 542ہو گئی  زیر علاج کورونا کے مریضوں کی  تعداد 75 ہو گئی،21مریضوں کی حالت تشویشناک،   ادھر محکمہ صحت کے مطابق گزشتہ چوبیس گھنٹوں (بقیہ نمبر21صفحہ6پر)

کے دوران ملتان میں 39 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی پازیٹیویٹی کی شرح 5.9 فیصد رہی   فوکل پرسن نشتر ہسپتال ڈاکٹر عرفان ارشد  نے بتایا کہ  نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں زیر علاج   لل وہاڑی کی 55 سالہ حلیمہ بی بی نے گزشتہ روز دم توڑ دیا  یوں یکم اپریل 2020  سے 13 اپریل 2021 کے درمیان کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 542 ہو گئی ہے،جبکہ نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا کہ مریضوں کی تعداد 75 ہو گئی ہے جن میں سے 35مریضوں کا تعلق ملتان سے ہے جبکہ زیر علاج 21 مریضوں  کی حالت تشویشناک  ہے،جبکہ کورونا کے شبہ میں 38 مریض زیر علاج ہیں جن کی رپورٹس کا انتظار  ہے،ادھر رواں سال نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں 5 ہزار 110 افراد رپورٹ ہوئے جن میں سے 1 ہزار 884 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے،ادھر محکمہ صحت ملتان کے ڈی ڈی ایچ او ڈاکٹر آصف کے مطابق گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ملتان میں 663 افراد کی کورونا ٹیسٹنگ کی گئی جن میں سے 39 میں کورونا کی تصدیق ہوئی یوں چوبیس گھنٹوں کے دوران پازیٹیویٹی کی شرح 5.9 فیصد رہی  کورونا وائرس کی تیسری لہر۔جیل ملازمین کی متاثر ہونے کی تعداد میں دن بدن اضافہ ہورہا ہے۔ڈی آئی جی ملتان ریجن چوہدری محسن رفیق ک بھی کورونا ٹیسٹ پازیٹو آگیا ہے۔اس کے ساتھ ساتھ 8 جیل ملازمین میں بھی کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ ملتان ریجن کی جیلوں میں قیدیوں اور جیل ملازمین کی ویکسینیشن کا سلسلہ جاری ہے۔اس سلسلے میں ڈسٹرکٹ جیل ملتان میں گزشتہ روز 11 قیدیوں اور سنٹر جیل میں 21قیدیوں  کو کورونا ویکسین لگائی گئی ہے۔جبکہ اسی طرح جیل ملازمین کو بھی ویکسین لگائی جارہی ہے۔ کرونا وائرس کے وار تھہم نہ سکے۔ گورنمنٹ بوائز ہائی سکول اللہ اباد کا ہیڈماسٹرسمیت دیگر اساتذہ کرام کے کرونا ٹیسٹ مثبت اگئے  ۔  راجن پور اور جام پور۔ کوٹلہ دیوان۔ فاضل پور سمیت دیگر ملحقہ علاقوں میں متعددلوگ کرونا کی بیماری میں مبتلا  بعض افراد نے بیماری بتانے سے انکار کر دیا۔ گورنمنٹ بوائز ہائی سکول اللہ اباد کو ہیڈماسٹر محمد عمران خلیل بھی کرونا کا شکار ہوگئے ہیں۔  اسی طرح گورنمنٹ ہائی سکول کوٹ طائر کے حسنین فرید۔ گورنمنٹ گرلزہائی سکول تتاروا لا کی نورین بخاری۔بھی کرونا کا شکار ہو گئی ہیں۔ ضلع حکام تعلیم نے ہیڈماسٹر کی چھٹی منظور کرتے ہوئے گھرپر ائیسو لیٹ ہونے کا حکم دے دیا۔ جنہوں نے اپنے اپ کو گھر میں قرنطینہ کر لیا ہے۔  چیف ایگزیکٹیو آفیسر ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی راجن پور ڈاکٹر محبت علی نے کہا ہے کہ پنجاب کے دیگر علاقوں کی نسبت ضلع راجن پور میں کرونا کی صورتحال کنٹرول میں ہے۔ مگر اس وبا سے بچنے کا واحد حل ہے کہ حکومتی جاری کردہ کورونا ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد کیا جائے۔تاہم ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی نے اس کی تیسری لہر سے نمٹنے کے لیے مربوط اور ٹھوس اقدامات کر رکھے ہیں۔ ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال راجن پور میں کرونا وارڈ کے لئے 10 بیڈ اور 6وینٹی لیٹرز جبکہ تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال جامپور اور روجھان میں بھی 5,5 بیڈ کے آئسولیشن رومز بنائے گئے ہیں۔ یہ باتیں انہوں نے آج ڈسٹرکٹ کمپلیکس کے کمیٹی روم میں ہنگامی پریس کانفرنس کے دوران خطاب کرتے ہوئے کہیں۔ اس موقع پر چیف ایگزیکٹو آفیسر ایجوکیشن ملک مسعود ندیم، ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر غلام مرتضی، ڈاکٹر ثقلین،ڈاکٹر ہاشم علی، ڈاکٹر دلاور خان اور دیگر موجود تھے۔ انہوں نے بتایا کہ اس وقت ضلع راجن پور میں 52 افراد کرونا سے متاثر ہیں۔ جن کا علاج جاری ہے۔جبکہ 561افراد کے نمونہ کے رزلٹ لیبارٹری سے آنا باقی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع میں دو ویکسینیشن سینٹرز پر بھی رجسٹرڈ شہریوں میں مفت ویکسین لگانے کا عمل بھی جاری ہے۔ انہوں نے عوام کو ہدایت کی کہ ہے کہ وہ اس وبا سے بچنے کے لئے محکمہ صحت سے تعاون کریں اور زیادہ سے زیادہ اپنے بزرگوں کو1166 پر رجسٹریشن کروا کر ویکسینیشن کرائیں۔ انہوں نے اس خدشے کو بھی مسترد کرتے ہوئے کہاہے کہ ویکسین کی کوالٹی میں کہیں کوئی کمی نہ ہے اور ضلع راجن پور کی بڑی نامور شخصیات نے اپنی فیملی کے بزرگ افراد اور محکمہ صحت کے فرنٹ لائن کام کرنے والے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل اسٹاف کے دو ہزار سے زائد ملازمین کی ویکسینیشن کی گئی ہے۔  رمضان المبارک کے دوران کرونا ویکسی نیشن سنٹرز کے اوقات کار کے حوالے سے صوبائی وزارت صحت کی جانب سے فیصلہ کیاگیا ہے کہ یکم رمضان المبارک سے پنجا ب بھر میں کرونا ویکسی نیشن سنٹرز میں پہلی شفٹ کے دوران صبح10سے شام 4بجے اور پھر رات 9سے رات1بجے تک دوسری شفٹ میں ویکسی نیشن کا عمل جاری رکھا جائے گا کرونا ویکسی نیشن سنٹرز پر تیاریاں شروع کردی گئی ہیں۔ نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں ایک جدہ سے آنے والے  مسافر کو داخل کروایا گیا ہے۔  نشتر ہسپتال میں جدہ سے ملتان آنے والے مسافر محمد اشتیاق کو دوران میڈیکل چیک اپ ٹمپریچر تیز ہونے پر  نشتر ہسپتال داخل کروایاگیا ہے۔ جہاں ڈاکٹرز کے مطابق ایس اوپیز کے مطابق مسافر کے کورونا ٹیسٹ کیئے جائے گے جس کی رپورٹ آنیکیبعد فیصلہ کیاجائے گا کہ اس کو نشتر میں رکھا جائے یا گھر جانے کی اجازت دی جائے گی تاہم بعد ازرپورٹ پتاچل سکے گا۔ اسسٹنٹ کمشنر مظفرگڑھ رانا محمد شعیب نے ڈپٹی کمشنر انجینر امجد شعیب ترین کی ہدایت پر شہر میں کورونا ایس او پیز کیخلاف ورزی کرنے والوں کیخلاف کارروائی کرتے ہوئے عوامی کلاتھ ہاوس مین بازار اور جھنگ روڈ پر ڈی جے موبائل شاپ کو سیل کردیا۔اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر رانا محمد شعیب نے کہا کہ کورونا ایس او پیز کیخلاف ورزی نہ قابل برداشت سے کورونا کے خطرات کے محفوظ رہنے کے لئے حکومت پنجاب کی جانب سے جاری کردہ ایس او پیز پر ضلعی انتظامیہ عملدرآمد کرانے کے لئے کوشاں ہے۔تمام شہری خود اپنے اہلخانہ کو کورونا کے خطرات سے بچانے کے لئے حفاطتی اقدامات کو ہر صورت یقینی بنائیں۔ 

کرونا

مزید :

ملتان صفحہ آخر -