روہیلانوالی:نجی ہسپتال میں آپریشن‘ چار مریضوں کی آنکھیں متاثر

روہیلانوالی:نجی ہسپتال میں آپریشن‘ چار مریضوں کی آنکھیں متاثر

  

مظفرگڑھ،چوک مہر پور(نامہ نگار، نمائندہ پاکستان)روہیلانوالی کے نجی ہسپتال میں آنکھوں کے ناکام آپریشن سے دوٹانگوں سے محروم خاتون سمیت چار مریضوں کی ایک ایک آنکھ ضائع ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔تفصیل کے مطابق روہیلانوالی میں قائم نجی ہسپتال شان لطیف سرجیکل ہسپتال میں کچھ روز قبل آنکھوں کے ڈاکٹر حبیب الرحمن سے آنکھوں کا آپریشن کرانے(بقیہ نمبر53صفحہ6پر)

 کیلئے غریب خواتین و مرد خادم حسین سکنہ مانکا بھٹہ، حیات مائی سکنہ حسن پورترنڈ،بیوہ ممو مائی سکنہ حسن پور ترنڈ اور دو ٹانگوں سے معذور کلثوم مائی سکنہ آلودیوالی سمیت دیگر آئے اور انصاف ہیلتھ کارڈ سے مفت آپریشن کرایا مگر ڈاکٹر کی مبینہ غفلت، لاپروائی کیوجہ سے آپریشن کے چند روز بعد مذکورہ مریضوں کی آنکھیں ٹھیک ہونے کی بجائے بینائی ختم ہو گئی جس پر مریضوں نے پریشانی کے عالم میں آئی اسپیشلسٹ دیگر پروفیسر ڈاکٹروں سے چیک اپ کرایا جہاں انہیں معلوم ہوا کہ ان کے غلط آپریشن کیوجہ سے انکی زندگی بھر کیلئے آنکھیں ضائع ہو چکی ہیں جس پر مریض اور لواحقین نے شورمچایا مگر ہسپتال کے عملہ نے ان کی ایک بھی نہ سنی اور انہیں ہسپتال سے بھگا دیا متاثرہ مریضوں کا کہنا ہے کہ وہ انتہائی غریب ہیں اور انصاف ہیلتھ کارڈ کے ذریعے تجویز کردہ ہسپتال میں اپنی آنکھوں کا مفت آپریشن کرایا مگر ہسپتال کی نااہل انتظامیہ اور ڈاکٹر کی غفلت کے باعث وہ اپنی بینائی ہمیشہ کیلئے کھو چکی ہیں اور عمر کے اس حصہ میں انہیں بقیہ زندگی گزارنے میں شدید مشکلات کا سامنا رہے گا انہوں نے وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار اور ہیلتھ کیئر کمیشن پنجاب سے فوری نوٹس لیکر انکا علاج معالجہ کرانے اور آنکھوں کی بینائی دوبارہ لانے سمیت نجی ہسپتال کو سیل کرنے اور ملوث کرداروں کے خلاف مقدمات کے اندراج کی اپیل کی ہے دریں اثنا ہسپتال کے مالک سے جب موقف لینے کیلئے ان کے نمبر پر رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ وہ کچھ دیر بعد موقف دیں گے اور کچھ دیر بعد انہیں دوبارہ کال کی گئی تو انہوں نے فون اٹینڈ کرنے کی بجائے فون بند کردیا۔

آنکھیں متاثر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -