آج پی ڈی ایم جہاں کھڑی ہے  اس کی ذمہ دار پیپلز پارٹی ہے

      آج پی ڈی ایم جہاں کھڑی ہے  اس کی ذمہ دار پیپلز پارٹی ہے

  

مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما خرم دستگیر نے کہا ہے کہ بہانہ بنا کر پی ڈی ایم کے عہدوں سے مستعفی ہونے کااعلان کرنا مناسب بات نہیں ہے بلاول بھٹو زرداری کو پی ڈی ایم کی طرف سے نوٹس جاری کر نے کا فیصلہ پی ڈی ایم کا تھا شاہد خاقان عباسی نے تواس پی ڈی ایم کے فیصلے کی روشنی میں وہ وضاحتی نوٹس ان کو جاری کیا تھا لہذا اس وضاحتی نوٹس کو بہانہ بنا کر پی ڈی ایم سے الگ ہونے کا فیصلہ کوئی اچھا نہیں ہے اس کا مطلب تو یہی ہے کہ پیپلزپارٹی نے پی ڈی ایم سے اپنی سیاسی وابستگی کو بھی پھاڑنے کی ایک کوشش کی ہے۔وہ ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کررہے تھے،ان کا کہنا تھا کہ بلاول بھٹو زرداری کی جانب سے پہلے پی ڈی ایم کے شوکاز نوٹس کو پھاڑ کر پھینکنے اور پھر مستعفی ہونے کے اعلان کے بعدپی ڈی ایم کی قیادت کو اب سوچنا ہوگا کہ کیا پی ڈی ایم کی صفوں میں دو عملی کو جاری رکھا جائے یا یکسوئی قائم کی جائے ہم یہ سمجھتے ہیں کہ پیپلز پارٹی نے جب پی ڈی ایم کے فیصلے کے برعکس سید یوسف رضا گیلانی کو کامیاب کروانے کے لئے حکومت کی طرف سے تحفے میں ملنے والی جماعت سے ووٹ لیا تھا تو اسی دن پیپلز پارٹی نے پی ڈی ایم کے اتحاد کو خطرے میں ڈالنے کی بنیاد رکھ دی تھی آج پی ڈی ایم جہاں کھڑی ہے اس کی ذمے دار پیپلز پارٹی ہے۔

خرم دستگیر 

مزید :

صفحہ اول -