پولیس نے چادر اور دیواری کا تقدس پامال کیا‘ ناصر خان

پولیس نے چادر اور دیواری کا تقدس پامال کیا‘ ناصر خان

  

سخاکوٹ(نمائندہ  پاکستان) پو لیس سٹیشن اکرام پور با ئز وخرکی مردان نے چادر اور چار دیواری کے تقدوس کو پامال کر کے بغیر کسی ورانٹ گھر میں دا خل ہو کر کشمیر کے مسلما نو ں پر ہو نے والے ظلم کی یاد تاز کی اور چلتے چلتے گھر سے قیمتی سا مان بھی چوروں کی طر ح لے گئی کئی بار انصاف کے لئے پو لیس کے احکام کی دفتروں کے دورازے کھٹکھٹایا لیکن پو لیس کے جا نب سے کو ئی انصاف نہیں ملا  تفصیلات کے مطا بق نا صر خان ولد سعد اللہ خان ساکن مہر دی درگئی حال خدو پل سخا کو ٹ نے درگےء میں میں میڈ یا کو اپنا فر یاد سنتے ہو ئی کہا کہ  گز شتہ دنو ں پو لیس سٹیشن با ئیز و خر کی اکر ام پور کے ایس ایچ او غلام نبی خان، اے ایس ائی سبز علی خان،عارف خان،امجد خان بمعہ دیگر لیو یز نفری کے ہمراہ دن دحاڑے بغیر کسی ورانٹ اور بغیر کسی وجہ  ہمارے رہا ئشی ماکن جو کہ ملاکنڈ اور مر دان کے سنگم پر خدو پل کے قریب واقع ہے کے اچانک گھر  میں داخل ہو کراس  انداز سے تلاشی شروع کی جس طر ح  کشمیر میں  ہندوستان کے فوج بھی مسلمانو ں  کے ساتھ نہیں کر تے  جس طر ح پولیس سٹیشن اکرام پور با ئز وخرکی کے ایس ایچ او  غلام نبی خان اور ان کے ہمراہ دیگر پو لیس والو ں نے ہمارے ساتھ کیا گیا ہے  اور تلاشی کے نام پر لو ٹ مار  کر کے  اپنے ساتھ صندوقوں سے 90ہزار سعودی ریال،7.50تو لے سونا، 70ہزار روپے پاکستانی نقد اور ایک عدد 30پستول لا ئسنس یا فتہ ساتھ لے گئی ہیں   انھو ں نے کہا کہ اج تک ہمارے گھر کے کسی فرد کے خلاف کسی بھی تھا نے بھی کو ئی مقدمہ وغیرہ درج نہیں کیو نکہ ہمارے تمام بھا ئی سعودی عرب میں محنت مزدوری عر صہ دراز سے کر رہے ہیں اور ایس ایچ او غلام نبی تھا نہ اکرام پو ر با ئزو خر کی مردان  مجھے  دھمکیا ں دینے کے ساتھ ساتھ بے جا تنگ کر رہے ہیں انھو ں نے کہا کہ میں نے اپنے مکان پر  بغیر کسی وجہ اور چادر اور چار دیواری کے تقدوس کو پا مال کر نے کے الزام میں ایس ایچ او اور ان کے دیگر ساتھیو ں کے خلاف انصاف کے خا طر ایڈ یشنل سیشن جج کا ٹلنگ کے عدالت میں در کواست جمع کی تھے جس پر جج صاھب با قاعدہ پو لیس گردی کے حوالے سے ایس اایچ او غلام نبی،اے ایس ائی سبز علی خان،عارف خان اور امجد خان کے خلاف ایف ائی ار کے احکامات جاری کی لیکن پولیس تھا نہ اکرام پور با ئزو خرکی لے عملہ اپنے پیٹی بند کے خلاف کو ئی کاروائی نہیں کر رہے تھے اور ایڈ یشنل سیشن جج کے فیصلے کو مانے سے بھی انکار کر رے تھے  لیکن اخر کار انھو ں نے مذکورہ بالا افراد کے خلاف ایف ائی ار درج کی لیکن دفعات انھو ں نے مر ضی کے مطابق لگا ئے ہے اور ابھی تک انھو ں نے مجھے ایف ائی ار کے نقل بھی نہیں دے رہے ہیں اور ٹال مٹول سے کام لے رہے ہیں ہم نے ائی جی پی کے پی کے،ڈی ائی جی مردان ڈویثرن اور ڈی پی او مردان کو انکوائر کی درکواست بھی دی ہے لیکن وہ بھی اپنے پیٹی بند کے خلاف کو ئی کاروائی کر نے کے لئے تیار نہیں اور نہ ابھی تک انھو ں نے مجھے سے را بط کیا ہے انھو ں نے کہا کہ اس وقت خیبر پختو نخوا میں کے پی کے پولیس کے زندہ باد کے نعرے ہو رے ہیں جبکہ دوسرے جانب اکرام پور پولیس تھا نے کے ایس ایچ او غلام نبی اور ان کے سا تھیو ں لو ٹ مار کا بازار گرم کر رکھا ہے اور بے جا شریف لوگو ں کو پیسو ں کی خا طر تنگ کر تے ہیں انھو ں نے پی ٹی ائی کے چیئر مین وزیر اعظم پاکستان عمران خان،چیف جسٹس اف پاکستان،چیف جسٹس پشاور ہا ئی کورٹ،وزیر اعلی ٰ خیبر پختو نخوا محمود خان،چیف سیکرٹری کے پی کے اور دیگر اعلیٰ حکام سے مطا لبہ کیا کہ اس واقعات پر از کود نو ٹس لے اور ایسے پولیس والو ں جیسے ایس ایچ او غلام نبی،اے ایس  ائی سبزعلی خان،عارف خان اورامجد خان جو  محکمہ پولیس کے پی کے پر بد نما داغ ہے کے خلاف قانونی کاروائی اور ایس ایچ او غلام نبی خان اور دیگر ساتھیو ں کے خلاف ہمارے جانب سے درج شدہ ایف ائی ار میں مزید دفعات شامل کر نے احکامات جاری کیا جا ئے  ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -