چترال‘ سینئر صحافی ضیاء شاہد کی وفات پر پریس کلب کا تعزیتی اجلاس 

چترال‘ سینئر صحافی ضیاء شاہد کی وفات پر پریس کلب کا تعزیتی اجلاس 

  

سرائے نورنگ‘ بنوں‘ چترال)بیورو رپورٹ+ نمائندگان)خبریں گروپ آف نیوز پیپرکے مالک اور ملک کے معروف صحافی ضیا شاہد کی وفات پر چترال پریس کلب میں تعزیتی اجلاس منعقد ہوئی جس میں مرحوم کی صحافتی خدمات کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کی گئی اور ان کے وفات المناک کو میڈیا کی دنیا میں ایک ناقابل تلافی نقصان قراردیا گیا۔ پریس کلب کے صدر ظہیر الدین کی صدارت میں منعقدہ اجلاس میں کہا گیا کہ ضیا شاہد نے آزادی صحافت کے لئے جو قربانیاں دی اور جرنلزم کی جہت کا تعین کرنے میں جو کردار ادا کیا، وہ تاریخ میں سنہری حروف سے لکھے جائیں گے۔ اجلاس میں مرحوم کی روح کی ایصال ثواب کے لئے فاتحہ خوانی کی گئی۔سرائے نورنگ(نمائندہ پاکستان)ڈسٹرکٹ الیکٹرانک ایسوسی ایشن لکی مروت نے  جدیدصحافت کے بانی اور خبریں میڈیا گروپ کے چیف ایڈیٹر ضیاء شاہد کے انتقال پر شدید رنج وغم کااظہار کرتے ہوئے اُسے قومی سانحہ قرار دیا۔گزشتہ روز یہاں ایک تعزیتی اجلاس زیرصدارت صدر ولیدخان مروت منعقد ہوا جس میں عہدیداروں سمیت سنیئرصحافیوں نے کثیر تعدادمیں شرکت کی۔صدر ولیدخان مروت نے سنیئرصحافی اور خبریں میڈیاگروپ کے چیف ایڈیٹر ضیاء شاہد کے انتقال کو دنیائے صحافت کے لئے ایک بڑدھچکاقراردیتے ہوئے کہاکہ ملک کی صحافی بردادری  ایک دلیراور منجھے ہوئے صحافی سے محروم ہوگئی شرکاء اجلاس نے مرحوم کے ایصال ثواب کے لئے خصوصی کی گئی اور اللہ تعالیٰ سے دعاکی کہ لواحقین کو اس ناقابل برداشت نقصان برداشت کرنے کی توفیق عطاء فرمائیں۔بنوں ( بیو رورپورٹ)ملک کے مایہ ناز سینئر صحافی کالم کار تجزیہ نگار ضیاء شاہد کے انتقال پر بنوں پریس کلب میں تعزیت اجلاس،ضیا شاہد کے ایثال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی اور دراجات کی بلندی کیلئے قرآن خوانی کا اہتمام کیا گیا بنوں پریس کلب کے زیر اہتمام چیف ایڈیٹر روزنامہ خبریں اور ملکی کے سینئر صحافی ضیاء شاہد کے انتقال پر اجتماعی دُعائیہ تقریب اور قرآن خوانی کی گئی اس موقع پر صدر پریس کلب رجسٹرڈ بنوں محمد عالم خان،جنرل سیکرٹری محمد نعمان خطاب،روزنامہ خبریں اور چینل فائیوکے رپورٹر فرحت اللہ بابر،رفعت اللہ قریشی،آصف عمران،سلمان خان،محمد وسیم خان،اسفند یار خان سمیت دیگر صحافیوں نے تعزیتی پیغام میں کہا کہ مرحوم ضیا شاہد نے ملک میں جدید صحافت کی بنیاد رکھی اور جدید صحافت کو نئی نسل تک روشناس کرایا جسکی وجہ سے ضیاء شاہد کو ملکی سطح پر سیاسی مذہبی سمیت تمام طبقوں میں اہم مقام حاصل تھا جنہوں نے نہ صرف صحافتی خدمات سرانجام دی بلکہ ملک کے بیوؤں بے کسوں غریب اور مستحق افراد کیلئے امتنان شاہد کے نام سے فاؤنڈیشن بھی قائم کیا جس سے ملک بھر کے لاکھوں مستحق افراد مستفید ہورہے ہیں انہوں نے کہا کہ ضیاء شاہد کے انتقال سے ملک میں اعلیٰ صحافتی کردار بند ہوگیا کیونکہ ضیاء شاہد نے حکومتی اپوزیشن اور تمام حلقوں میں مقبولیت کے باعث اہم فیصلوں میں کلیدی کردار رہا اُن کے وفات سے نہ صرف اُن کا خاندان بلکہ ایک صحافتی یونیورسٹی کا سورج غروب ہوگیا ہے اللہ تعالیٰ مرحوم کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام نصیب فرمائیں 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -