مدرسے کو فنڈز دینے کا معاملہ،سپریم کورٹ نے بلوچستان حکومت سے جواب طلب کرلیا

مدرسے کو فنڈز دینے کا معاملہ،سپریم کورٹ نے بلوچستان حکومت سے جواب طلب کرلیا
مدرسے کو فنڈز دینے کا معاملہ،سپریم کورٹ نے بلوچستان حکومت سے جواب طلب کرلیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن ) سپریم کورٹ نے مدرسے کو فنڈز دینے سے متعلق کیس میں بلوچستان حکومت سے جواب طلب کرلیا۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق سپریم کورٹ میں بلوچستان میں مدرسے کی تعمیرمیں سرکاری فنڈکے استعمال سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت عظمیٰ کے جسٹس قاضی امین نے سماعت کے دوران ریمارکس دیئے کہ پاکستان میں عقیدے کے لحاظ سے تمام لوگ مسلمان نہیں ہیں، جو پیسہ مدرسے کیلئے دیا گیا وہ عوام کے ٹیکس کا پیساتھااور ٹیکس ہندو ، عیسائی اور دیگر اقلیتیں بھی دیتی ہیں۔ریاست کے پیسے کے غلط استعمال سے مدرسے کھولنا عمدہ اقدام نہیں۔

عدالت نے کہا کہ ریاست کی ذمے داری سستا انصاف، صحت تعلیم کی سہولت دینا ہے فنڈ مہیا کرنا نہیں اس طرح تو ہندو بھی مندر کی تزئین آرائش کیلئے فنڈز مانگیں گے۔ عدالت نے بلوچستان حکومت سے جواب طلب کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت ملتوی کردی۔

مزید :

قومی -