نہرسوئز میں پھنسنے والا مال برداربحری جہاز مصر نے ضبط کرلیا

نہرسوئز میں پھنسنے والا مال برداربحری جہاز مصر نے ضبط کرلیا
نہرسوئز میں پھنسنے والا مال برداربحری جہاز مصر نے ضبط کرلیا
سورس: Wikimedia

  

قاہرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) دو ہفتے قبل مصر کی نہر سوئز میں تائیوان کا ایورگرین نامی مال بردار بحری جہاز پھنس گیا جس سے کئی دن تک نہر سوئز بند رہی اور بحری جہازوں کی آمدورفت معطل رہی۔ غیرملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق مصری حکام نے اس معاملے پر عدالت سے رجوع کیا تھا جہاں سے اب ایورگرین کے مالکان کو 90کروڑ ڈالر جرمانے کا حکم سنا دیا گیا ہے اور یہ فیصلہ آنے پر مصر حکام نے ایورگرین نامی اس دیوقامت بحری بیڑے کو ضبط کر لیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق جب تک ایورگرین کے مالکان جرمانے کی رقم ادا نہیں کرتے یہ بحری جہاز مصر کے قبضے میں رہے گا۔ واضح رہے کہ ایورگرین 23مارچ کو نہرسوئز میں کنارے کے زیادہ قریب چلے جانے کے سبب ریت میں دھنس گیا تھا جسے نکالنے میں 6دن لگ گئے۔ یہ بحری جہاز پھنسنے سے ایشیاءاور یورپ کے درمیان یومیہ 9.6ارب ڈالر کی تجارت رک گئی تھی۔

 نہر سوئز بند رہنے سے مصر کو ریونیو کی مد میں روزانہ 1کروڑ 20لاکھ ڈالر سے ڈیڑھ کروڑ ڈالر تک کا نقصان ہوتا رہا۔دنیا کی دس فیصد سے زائد تجارت اسی نہر سوئز کے راستے ہوتی ہے کیونکہ یہ ایشیاءاور یورپ کے درمیان مختصر ترین سمندری راستہ ہے لہٰذا اس نہر سے مصر سالانہ اربوں ڈالر کا ریونیو کماتا ہے۔

مزید :

عرب دنیا -