دبئی میں برہنہ فوٹوشوٹ پر پکڑی گئی غیرملکی ماڈلز ملک بدر لیکن ایک لڑکی کو ڈی پورٹ نہیں کیا گیا مگر کیوں؟ وجہ بھی سامنے آگئی

دبئی میں برہنہ فوٹوشوٹ پر پکڑی گئی غیرملکی ماڈلز ملک بدر لیکن ایک لڑکی کو ڈی ...
دبئی میں برہنہ فوٹوشوٹ پر پکڑی گئی غیرملکی ماڈلز ملک بدر لیکن ایک لڑکی کو ڈی پورٹ نہیں کیا گیا مگر کیوں؟ وجہ بھی سامنے آگئی

  

کیف(مانیٹرنگ ڈیسک) دبئی میں گزشتہ دنوں ایک ہوٹل کی بالکونی میں برہنہ فوٹوشوٹ کرانے پر 40ماڈلز اور فوٹوشوٹ کے روسی آرگنائزر کو گرفتار کر لیا گیا تھا۔ ان ماڈلز کا تعلق روسی خطے کے ممالک سے تھا، جن میں سے 11یوکرین کی شہری تھیں۔ خیال ظاہر کیا جا رہا تھا کہ ان ماڈلز کو قید کی سزا ہو سکتی ہے تاہم اماراتی حکام نے انہیں اب ملک بدر کرکے ان کے آبائی ممالک بھیج دیا ہے۔ 

ڈیلی سٹار کے مطابق یوکرین کی 11میں سے 10ماڈلز بھی متحدہ عرب امارات سے ڈی پورٹ ہو کر واپس یوکرین پہنچ چکی ہے۔ ایک ماڈل کو کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کی وجہ سے ڈی پورٹ نہیں کیا جا سکا۔ تاہم صحت مند ہونے کے بعد اسے بھی ملک بدرکر دیا جائے گا۔ 

رپورٹ کے مطابق ان ماڈلز نے اسرائیل کی ایک فحش فلموں کی ویب سائٹ کے لیے برہنہ فوٹوشوٹ کرایا تھا، جس کی تصاویر اور ویڈیوز خود فوٹوشوٹ کے آرگنائزر نے سوشل میڈیا پر پوسٹ کر دیں کیونکہ وہ متحدہ عرب امارات کے قانون سے واقف نہیں تھا۔ یہ تصاویر اور ویڈیو وائرل ہونے پر پولیس حرکت میں آئی اور تمام ماڈلز اور آرگنائزر کو گرفتار کر لیا۔متحدہ عرب امارات کے قانون میں اس طرح کی شرمناک حرکت کرنے پر 6ماہ قید اور 5ہزار درہم جرمانہ ہو سکتا ہے تاہم ان ماڈلز کو 10دن تک جیل میں قید رکھنے کے بعد ملک بدر کر دیا گیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -