کورٹ مارشل ہونے والے عادل راجہ لندن میں بریگیڈیئر راشد نصیر سے ہتک عزت کا مقدمہ ہار گئے 

 کورٹ مارشل ہونے والے عادل راجہ لندن میں بریگیڈیئر راشد نصیر سے ہتک عزت کا ...
 کورٹ مارشل ہونے والے عادل راجہ لندن میں بریگیڈیئر راشد نصیر سے ہتک عزت کا مقدمہ ہار گئے 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق فوجی افسر عادل راجہ لندن میں بریگیڈیئر راشد نصیر سے ہتک عزت کا مقدمہ ہار گئے ۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارم ’ ایکس‘ (سابقہ ٹویٹر) پر سینئر صحافی ’وجاہت کاظمی‘کی جانب سے دعویٰ کیا گیاہے کہ پاکستانی اداروں کیخلاف مہم چلانے کے الزامات پر کورٹ مارشل ہونے والے سابق فوجی افسر اور یوٹیوبر عادل راجہ لندن میں سابقہ آئی ایس آئی بریگیڈیئر راشد نصیر سے ہتک عزت کا مقدمہ ہار گئے ہیں اور برطانیہ کی ہائیکورٹ نے انہیں بریگیڈیئر ریٹائر راشد نصیر کو 10 ہزار پاونڈ  ادا کرنے کا حکم جاری کر دیا ہے ۔

یاد رہے کہ کچھ عرصہ قبل عادل راجہ کی جانب سے بریگیڈیئر راشد نصیر پر مبینہ طور پر پاکستان تحریک انصاف کے خلاف دھاندلی کرنے کے سنگین الزاما ت عائد کیئے گئے تھے ، جس پر راشد نصیر نے قانونی اقدامات کرتے ہوئے لندن میں ان کے خلاف ہتک عزت کا کیس دائر کیا ۔لیکن کیس کی شنوائی کے دوران وہ اپنے بے بنیاد دعوے ثابت کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہوئے ہیں اور انہیں اب اس کے نتائج بھی بھگتنا ہوں گے۔

راشد نصیر نے برطانوی عدالت میں دائر کیے گئے مقدمے میں یہ مؤقف اختیار کیا کہ یوٹیوبر نے 14 جون 2022 کو حاضر سروس فوجی افسر کے خلاف مہم کا آغاز کیا۔ مدعی مقدمہ کے وکلا نے مؤقف اپنایا ہے کہ یوٹیوبر کی طرف سے چلائی گئی مہم سے حاضر سروس بریگیڈیئر کی ساکھ کو شدید نقصان پہنچا۔

خیال رہے کہ میجر (ر) عادل راجہ گزشتہ برس اپریل میں اسلام آباد سے لاپتہ ہونے کے بعد لندن پہنچ گئے تھے۔

مزید :

قومی -