دنیا کی خوفناک ترین پلاسٹک سرجریاں

دنیا کی خوفناک ترین پلاسٹک سرجریاں
دنیا کی خوفناک ترین پلاسٹک سرجریاں

  

پیرس (نیوز ڈیسک) پلاسٹک سرجری کو عموماً خوبصورتی میں اضافے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے لیکن اگر اس میں گڑ بڑ ہوجائے تو نتائج بہت بھیانک ہوسکتے ہیں۔ مندرجہ ذیل واقعات میں بھی کچھ ایسی ہی گڑ بڑ ہوگئی۔

-1 جنوبی کوریا کی ہینگ ہوکو نے اپنی پلاسٹک سرجری خود ہی کرنے کا فیصلہ کیا۔ اس نے اپنے چہرے کی جلد میں کھانے کے تیل کو ٹیکے کے ذریعے داخل کرنا شروع کردیا۔ ہینگ کا چہرہ خوفناک طریقے سے پھولنا شروع ہوگیا اور اگرچہ ڈاکٹر اس کے چہرے اور گردن سے اب تک 180 گرام مواد نکال چکے ہیں لیکن ابھی بھی اس کا چہرہ بہت پھولا ہوا ہے۔

-2 دنیا کی خوبصورت ترین عورتوں میں شمار ہونے والی تارا ریڈ کی لائپوسکشن، کمر اور چھاتی کی پلاسٹک سرجری میں خرابی واقع ہونے کی وجہ سے اس کی جلد 80 سالہ بوڑھی عورت جیسی ہوگئی۔

-3 لارن یارڈلی نامی 25 سالہ خاتون نے نسوانی حسن میں اضافہ کیلئے سلیکوں میلانٹ جسم میں داخل کروائے لیکن اس کے جسم میں انہیں قبول نہ کیا اور 2 ماہ بعد یہ اس کے جسم کو چیرتے ہوئے باہر نکلنا شروع ہوگئے۔

-4 خواجہ سرا امینڈا لیپوانے عورت نظر آنے کے لئے متعدد دفعہ پلاسٹک سرجری کروائی لیکن بالآکر اس کا چہرہ انتہائی بھیانک صورت اختیار کرگیا۔

-5 ایک امریکی خاتون جب جعلی پلاسٹک سرجن کے ہتھے چڑھی تو اس نے اس کے گالوں اور ہونٹوں میں سلیکون کے انجکشن لگادئیے جن کی خرابی کی وجہ سے اس کی ہونٹ اور گال زخموں سے بھر گئے۔

-6 مشہور اداکار اور ماڈل مکی رورک نے باکسنگ میں زخمی ہونے کے بعد پلاسٹک سرجری کروائی لیکن اس کا چہرہ اس قدر خراب ہوگیا کہ وہ شوبز کی دنیا سے ہی باہر ہوگیا۔

-7 بنگ اینگ نامی ماڈل نے لبوں کی پلاسٹک سرجری کروائی مگر یہ اتنے پھول گئے کہ دیکھنے کے قابل ہی نہ رہے۔

-8 مشہور گلوکار پیٹ برنس نے گالوں، ناک اور لبوں کو مزید خوبصورت بنانے کی کوشش کی مگر یہ آپریشن بگڑ گئے اور ان کا چہرہ خوفناک شکل اختیار کرگیا۔ پیٹ نے اپنی دردناک کہانی کے متعلق ایک ڈاکومینٹری بھی بنائی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس