آسٹریلوی ہسپتال نے 200مریضوں کو غلطی سے مردہ قرار دے دیا

آسٹریلوی ہسپتال نے 200مریضوں کو غلطی سے مردہ قرار دے دیا
آسٹریلوی ہسپتال نے 200مریضوں کو غلطی سے مردہ قرار دے دیا

  

میلبورین(نیوز ڈیسک )آسٹریلیا کے مشہور آسٹن ہسپتال نے غلطی سے200مریضوں کو مردہ قرار دے دیا جس پر ملک کے طبعی شعبہ میں ہلچل برپا ہو گئی۔ہسپتال نے حال ہی میں صحت یاب ہو کر چھٹی پا جانے والے مریضوں کے ڈاکٹروں کو ایک اطلاعی نوٹس بھیجا جس کا مقصد ڈاکٹروں کو یہ بتانا ہونا ہے کہ ان کے زیر علاج مریض کو چھٹی دے کر گھر بھیج دیا گیا ہے۔بد قسمتی سے اس دفعہ نوٹس بھیجنے میں تھوڑی سی غلطی ہو گئی اور ڈاکٹروں کو مریضوں کی چھٹی کی بجائے ان کی موت کا نوٹس بھیج دیا گیا۔نوٹس ملتے ہی کچھ ڈاکٹروں نے غمزدہ ہو کہ لواحقین کو فون کر کے اظہار افسوس بھی کر دیا ۔جونہی لوگوں نے بتایا کہ ان کے پیارے تو صحت یاب ہو کر گھر پہنچ چکے ہیں تو ڈاکٹروں نے دوبارہ ہسپتال سے رابطہ کیا جس پر اس افسوسناک غلطی کا علم ہوا اور ہسپتال نے ڈاکٹروں اور مریضوں اور ان کے اشتہ داروں سے معافی مانگ لی۔

آسٹریلین میڈیکل ایسوسی ایشن کے صدر ٹونی بارٹون نے ہسپتال کی غلطی کو ناقابل قبول قرار دے دیا ۔ان کا کہنا تھا کہ اس غلط نوٹس سے بہت سے لوگوں کو تکلیف اٹھانا پڑی اور خصوصاً وہ ڈاکٹر شدید صدمے کا شکار ہوئے جن کے زیر علاج مریض چھوٹی عمر کے بچے تھے۔انہوں نے اس واقعے کو آسٹریلوی شعبہ صحت کی قابل فخر روایات کے خلاف قرار دیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس