سمنگلی اور خالد ائیربیس پر دہشت گردوں کا حملہ، دھماکوں اور فائرنگ کا سلسلہ جاری، 5 حملہ آور ہلاک

سمنگلی اور خالد ائیربیس پر دہشت گردوں کا حملہ، دھماکوں اور فائرنگ کا سلسلہ ...
سمنگلی اور خالد ائیربیس پر دہشت گردوں کا حملہ، دھماکوں اور فائرنگ کا سلسلہ جاری، 5 حملہ آور ہلاک

  

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک) سمنگلی ائیربیس اور کوئٹہ ائیرپورٹ پر دہشت گردوں نے حملہ کر دیا اور ائیربیس میں داخل ہونے کی کوشش کی جسے سیکیورٹی فورسز نے ناکام بنا دیا۔ سیکیورٹی فورسز نے بھرپور مزاحمت کی اور اور 2 حملہ آور ہلاک ہو گئے جبکہ 8 سیکیورٹی اہلکار بھی زخمی ہوئے جنہیں طبی امداد کیلئے سی ایم ایچ ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق دہشت گردوں نے سمنگلی ائیربیس اور ائیرپورٹ پر حملے کے بعد خالد ائیربیس پر بھی حملہ کر دیا تاہم سیکیورٹی فورسز سے فائرنگ کے تبادلے میں 2 حملہ آور مارے گئے ہیں، ائیربیس کے قریب 5 بڑے دھماکے ہوئے جبکہ شدید فائرنگ کا سلسلہ ابھی تک جاری ہے۔ ذرائع کے مطابق مجموعی دونوں حملوں میں 4 دہشت گرد مارے گئے تاہم سرکاری و عسکری قیادت کی جانب سے تصدیق نہیں کی گئی ہے۔ وزیر داخلہ بلوچستان کے مطابق سمنگلی ائیربیس کے قریب ملنے والے چار بموں کو بھی ناکارہ بنا دیا گیا ہے۔ پاک فضائیہ کے ترجمان نے سمنگلی ائیربیس پر دہشت گرد حملے کی تردید کی ہے اور کہا ہے کہ سمنگلی ائیربیس پر حالات قابو میں ہیں اور سیکیورٹی ہائی الرٹ ہے۔ پاک فوج کے تعلقات عامہ کے ادارے (آئی ایس پی آر) سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ کوئٹہ ایئر پورٹ پر حملہ کرنے والے تمام دہشت گرد ہلاک کر دئیے گئے ہیں ۔دہشت گردوں کی جانب سے فائر کئے جانے والے راکٹ ایئر پورٹ کی حدود میں آ کر گرے تاہم ان سے کو ئی نقصان نہیں ہوااور دہشت گردوں کے ساتھ مقابلے میں ائیر بیس کاکوئی اہلکار جاں بحق نہیں ہوا۔ دوسری جانب ایئر پورٹ سے ملحقہ سمنگلی ایئر بیس پر سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ہے اور سرچ آپریشن جاری ہے۔

قبل ازیں کوئٹہ ائیرپورٹ اور سمنگلی ائیربیس کے اطراف میں یکے بعد دیگرے 8 دھماکے ہوئے جس کے بعد شدید فائرنگ کا سلسلہ شروع ہو گیا جو 2 گھنٹے گزرنے کے بعد بھی جاری رہا جبکہ وقفے وقفے سے دھماکوں کی آوازیں بھی آتی رہیں۔ سیکیورٹی فورسز نے ائیرپورٹ جانے والے تمام راستوں کو سیل کر دیا اور ائیرپورٹ اور ائیربیس کے اطراف میں پولیس کی بھاری نفری بھی تعینات کر دی جبکہ علاقے میں سرچ آپریشن بھی شروع کر دیا گیا اور فضائی حدود میں پاک فوج کے ہیلی کاپٹر محو پرواز رہے۔ سیکیورٹی ذرائع کے مطابق نامعلوم دہشت گردوں نے سمنگلی ائیربیس میں داخل ہونے کی کوشش کی تاہم سیکیورٹی فورسز کی جانب سے مزاحمت پر فائرنگ کا تبادلہ شروع ہو گیا جس کے نتیجے میں 2 دہشت گرد ہلاک ہوئے جبکہ 2 سیکیورٹی اہلکار بھی زخمی ہوئے جنہیں طبی امداد کیلئے سی ایم ایچ کوئٹہ منتقل کر دیا گیا ہے۔ عسکری ذرائع نے حملے کی تصدیق کی ہے اور بتایا ہے کہ نامعلوم سمت سے 2 راکٹ بھی فائر کئے گئے جو سمنگلی ائیربیس کے قریب خالی میدان میں گرے۔ حملے کے دوران دہشت گردوں کی جانب سے دستی بموں کا استعمال بھی کیا جا رہا ہے جبکہ ایک خودکش حملہ آور نے بھی خود کو دھماکے سے اڑایا ہے۔

مزید : قومی /اہم خبریں