کراچی، گیس سلنڈر لیک ہونے سے وین میں آگ لگ گئی ایک ہی خاندان کے 6افراد زندہ جل گئے

کراچی، گیس سلنڈر لیک ہونے سے وین میں آگ لگ گئی ایک ہی خاندان کے 6افراد زندہ جل ...

کراچی(آن لائن) کراچی کے علاقے گارڈن جیلانی مسجد کے قریب سلنڈر لیک ہونے کے باعث وین میں آگ بھڑک اٹھی جس کے نتیجے میں ایک ہی خاندان کے 6 افراد جاں بحق جبکہ 4زخمی ہوگئے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق لسبیلہ سے ہاکس بے جانے والی وین میں گیس سلنڈر لیک ہونے سے آگ بھڑک اٹھی، جس کے نتیجے میں موقع پر ایک ہی خاندان کے 6 افراد جھلس کرجاں بحق جب کہ متعدد زخمی ہوگئے زخمیوں کو فوری طبی امداد کے لیے سول ہسپتال منتقل کردیا گیا ۔ جاں بحق ہونے والوں میں 45 سالہ محمد سلیم، اہلیہ 40 سالہ نیلوفر، دو بیٹے 2 سالہ عبدالہادی اور14 سالہ شہریار، 45 سالہ بینش اوران کی بیٹی 14 سالہ مہوش شامل ہیں۔ریسکیو ذرائع کے مطابق لسبیلہ چوک کے رہائشی دو خاندان پکنک منانے کی غرض سے ہاکس بے جارہے تھے کہ گیس سلنڈر لیک ہونے سے وین میں آگ لگی جس کے فورا بعد وین ڈرائیور اور آگے بیٹھے دو بچوں نے گاڑی سے اتر کر جان بچائی لیکن پیچھے بیٹھے 6 افراد باہر نہ نکل سکے اور بری طرح جھلس کر موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے۔پولیس کا کہنا ہے کہ وین میں موجود دونوں سلنڈر صحیح حالت میں ہیں، ممکنہ طور پر وین میں آگ شارٹ سرکٹ کے باعث لگی ہو گی، تحقیقات کا آغازکردیا گیا ہے۔حادثے میں بچ جانے والے ایک بچے کا کہنا تھا کہ وین میں پہلے آگ لگی جس کے بعد وہ نیچے اترا اور دروازہ کھول کر باقی افراد کو نکالنا چاہتا تھا کہ اچانک دھماکا ہوا اور وین میں آگ بھڑک اٹھی۔ وین میں سوار افراد گارڈن کے رہائشی بتائے جاتے ہیں، عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ وین میں آگ لگتے ہی ڈرائیور موقع سے فرار ہوگیا۔موقع پر موجود افراد نے شکوہ کیا کہ بروقت اطلاع دیئے جانے کے باوجود فائر بریگیڈ کا عملہ موقع پر نہیں پہنچا جس کے باعث قیمتی جانوں کا نقصان ہوا۔پولیس نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر عینی شاہدین کے بیانات کی روشی میں شواہد اکٹھا کرنے شروع کر دیئے ہیں ۔ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے واقعہ پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیدیا واقعہ کے ذمہ داروں کیخلاف قانون کے مطابق کارروائی کی ہدایت کی گئی ہے۔

مزید : علاقائی


loading...