بے پناہ قربانیوں سے مملکت خداداد معرض و جود میں آیا : پرویز خٹک

بے پناہ قربانیوں سے مملکت خداداد معرض و جود میں آیا : پرویز خٹک

پشاور (سٹاف رپورٹر) وزیر ۱علیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ آزادی کی قدر و قیمت کا اندازہ غلامی کی زنجیروں میں جکڑی قومیں جانتی ہیں۔ یوم آزادی ہمیں ہمارے آباؤاجداد کی ان عظیم قربانیوں کی یاد دلاتاہے جس کے سبب آج ہم سب پاکستانی آزادی کی سانس لے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی ترقی اور عوام کی خوشحالی کا خواب اس وقت تک پورا نہیں ہو سکتا جب تک انصاف کی فراہمی،میرٹ کی بالادستی اور زندگی کی بنیادی سہولتیں عام آدمی کو اس کی دہلیز پر میسر نہ ہوں۔اس مرتبہ یوم آزادی کی اہمیت اس لئے بھی زیادہ ہے کہ سپریم کورٹ کے پانامہ کیس میں حالیہ فیصلے نے تحریک انصاف کے ایک نئے پاکستان کے نعرے کوتقویت دی ہے اور کرپشن اور لوٹ مار کرنے والوں کے احتساب کی راہ ہموار ہو گئی ہے۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار یوم آزادی پاکستان کے پر مسرت موقع پر کیا۔ وزیراعلیٰ نے خوشی کے اس موقع پر پوری پاکستانی قوم اور باالخصوص صوبہ خیبر پختونخوا کے عوام کو دلی مبارک باد دی ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک شفاف اور باوقار جمہوریت کو پروان چڑھانے کے لئے عوام کو عمران خان کا ساتھ دینا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ یہ پاکستان کی خوش قسمتی ہے کہ قوم کو عمران خان کی شکل میں ایک مخلص اور نڈر قیادت ملی ہے جو ملک کوبحرانوں کے نکالنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا قافلہ قیام پاکستان کے حقیقی مقاصد کے حصول کی طرف رواں دواں ہے اور انشاء اللہ وہ دن دور نہیں جب قائد اعظم محمد علی جناح اورمفکر پاکستان علامہ اقبال کا خواب شرمندہء تعبیر ہو گا۔انہوں نے کہا صوبہ خیبر پختونخوا میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے شروع دن سے اپنی اتحادی جماعتوں کے ساتھ ملکر ٹھوس اصلاحات کو متعارف کرایا اور اس کی روشنی میں قانون سازی کی ہے جس کے مثبت اثرات سے عوام مستفید ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تاریخ میںیہ بات لکھی جائے گی کہ تحریک انصاف کی حکومت نے خیبر پختونخوا میں ایک ایسا ٹھوس اور شفاف نظام وضع کیا جس سے ادارے مستحکم ہوئے اور مراعات یافتہ اور استحصالی طبقات کے وارے نیارے ختم ہوئے۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ملک میں سب سے پہلے صوبہ خیبر پختونخوا میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے بلدیاتی انتخابات منعقدکرا کے اختیارات اور مالی وسائل کا اختیار نچلی سطح پر عملی طور پر منتقل کیا تاکہ عام آدمی با اختیار ہو۔ انہوں نے کہا کہ ایک بے مثال جمہوریت میں عوام اپنے وسائل اور مشکلات کا حل مقامی سطح پر کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف نے میرٹ ، شفافیت اور گڈ گورننس کو یقینی بنانے کیلئے پچھلے چار سالوں میں ایسے اقدامات کیے جس کے دورس نتائج سامنے آئیں گے اور صوبے کے عوام کو یہ بات تسلیم کرنا پڑے گی کہ صوبائی حکومت نے عوامی فلاح و بہبود کے لئے جو کام کیے ہیں ان کی نظیر پچھلے70 سالوں میں نہیں ملتی۔انہوں نے کہا کہ آج کے دن مسلح افواج اور خیبرپختونخوا کی پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے جوانوں کو نہیں بھول سکتے جنہوں نے مادر وطن کی حفاظت کی خاطر اپنی قیمتی جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ ان کی قربانیاں ضرور رنگ لائیں گی۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کا عزم صوبے سے کرپشن کا یکسر خاتمہ ہے۔ ہم نے صوبے کو ایک نظام دیا تاکہ اس ناسور سے جان چھڑائی جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن نہ صرف اداروں کو کھوکھلا کرتی ہے بلکہ گڈ گورننس کے حصول میں ایک سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ہمیں یوم آزادی اور قومی ذمہ داریوں کااحساس ہے۔ یوم آزادی کے تناظر میں پوری قوم سیاسی وابستگیوں سے بالا تر ہو کر بد امنی، شورش اور انتہا پسندی کے آگے سیسہ پلائی دیوار بن جائے۔ وزیر اعلیٰ نے دعا کی کہ اللہ تعالیٰ صوبائی حکومت کو ملک کی بقاء و سا لمیت، آئین و قانون کی بالادستی اور حقیقی جمہوریت کے خواب کو شرمندہ کرنے میں سرخرو کرے۔

پشاور (سٹاف رپورٹر) وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویزخٹک ے ایوبیہ میں 114 کنال اراضی پر مشتمل مجموعی ترقیاتی پلان اور ایوبیہ چیئر لفٹ کی ماڈرنائزیشن کی آؤٹ سورسنگ جبکہ تھیم ایڈونچر پارک نتھیاگلی کے منصوبے کو خیبرپختونخوا بور ڈآف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ کے باہمی تعاون سے فوری طور پر مشتہر کرنے کی ہدایت کی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت صوبے کے سیاحتی مقامات کی تیز رفتار ترقی چاہتی ہے ۔تمام سیاحتی مقامات بہترین طریقے سے تیار کئے جائیں ہم نے سیاحت سے پیسہ ہی نہیں کمانا بلکہ لوگوں کو سیاحت کی سہولیات دینی ہیں۔ وہ وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور میں اعلیٰ سطح اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔صوبائی محکموں منصوبہ بندی و ترقیات ، خزانہ ، توانائی اور بلدیات کے انتظامی سیکرٹریوں ، بورڈ آف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ کے اعلیٰ حکام ، منیجنگ ڈائریکٹر آئی ٹی بورڈ اور دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی ۔اجلاس کو ایوبیہ چیئر لفٹ ، تھیم ایڈونچر پارک ، مالم جبہ روڈ ، ناران چیئر لفٹ اور دیگر ترقیاتی سکیموں پر پیش رفت سے آگاہ کیا گیا ۔وزیراعلیٰ نے ایوبیہ چیئر لفٹ کو جدید طرز پر ترقی دینے کی ضرورت زور دیا اور کہا کہ یہ لفٹ سیاحوں کیلئے بڑی پرکشش اور خوبصورت بنائی جاسکتی ہے۔لہٰذا اس کو مکمل ڈیزائن کے ساتھ آؤٹ سورس کریں ۔ناران چیئر لفٹ کے حوالے سے بتایا گیا کہ اس منصوبے کو بورڈ آف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ نے محکمہ صحت کے تعاون سے جون 2016 میں مشتہر کیا تھا مگر شدیدبرفباری اور دیگر وجوہات کی وجہ سے اس پر کام شروع نہیں ہو سکااور معاملہ ابھی تک التواء کا شکار ہے۔وزیراعلیٰ نے اس منصوبے کو بھی بورڈ آف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ کے تعاون سے مشتہر کرنے کی ہدایت کی اور کہاکہ پارکنگ سمیت دیگر سہولیات بھی فراہم کی جائیں ۔وزیراعلیٰ نے بیجنگ روڈ شو میں کئے گئے ایم او یوز پر معاہدوں کی پیش رفت بھی طلب کی اور ہدایت کی کہ جن منصوبوں پر ایم او یوز پر دستخط کئے گئے تھے اور تاحال اُن پر مزید پیش رفت نہیں ہوسکی اور متعلقہ کمپنی کے ساتھ معاہدہ طے نہیں پایا تووہ منصوبے بورڈ آف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ کے ذریعے مشتہر کئے جائیں ۔ اگر متعلقہ کمپنی معاہدے میں دلچسپی نہیں لے رہی تو ہمارے پاس دیگر آپشنز موجود ہیں۔ مقامی اور بین الاقوامی سرمایہ کار بورڈآف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ سے رابطے میں ہیں جو خیبرپختونخوا میں سرمایہ کاری میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں۔ وزیراعلیٰ نے اس موقع پر سرمایہ کاروں کی سہولت کیلئے اسلام آباد میں بورڈ آف انوسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ ، اکنامک زونز ڈویلپمنٹ اینڈ مینجمنٹ کمپنی ، انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ اور پیڈو کا مشترکہ دفتر قائم کرنے کی بھی منظوری دی اور کہاکہ یہ دفتر بہت ضروری ہے ۔وہ سرمایہ کار جو بہ وجوہ خیبرپختونخوا نہیں آسکتے اُنہیں اسلام آباد میں ہی سہولت فراہم کی جا سکتی ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...