آرٹیکل 62/63 ختم نہیں وسیع کیے جائیں گے، صحافی عبدالقیوم صدیقی کا دعویٰ

آرٹیکل 62/63 ختم نہیں وسیع کیے جائیں گے، صحافی عبدالقیوم صدیقی کا دعویٰ
آرٹیکل 62/63 ختم نہیں وسیع کیے جائیں گے، صحافی عبدالقیوم صدیقی کا دعویٰ

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر صحافی عبدالقیوم صدیقی نے کہا ہے کہ آئین سے آرٹیکل 62/63 ختم نہیں کیا جا رہا ہے بلکہ اسے وسعت دینے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں اور اس سلسلے میں ن لیگ اور پیپلز پارٹی ایک پیج پر ہیں۔

نجی ٹی وی جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی عبدالقیوم صدیقی نے کہا کہ جب مسلم لیگ ن کی ریلی کے دوران ان کی جہلم کے ٹیولپ ہوٹل میں میاں نواز شریف سے کھانے پر ملاقات ہوئی تو نواز شریف نے کہا کہ وہ جمہوری طاقتوں کو ساتھ لے کر آگے چلیں گے اور اس مقصد کے حصول کیلئے میثاق جمہوریت کو بنیاد بنا کر آگے چلا جا سکتا ہے، اداروں میں ڈائیلاگ کے رضا ربانی کے سوال کا جواب نواز شریف نے عوامی ریلی میں دیا ہے۔

قوم کا مزاج جمہوری پارلیمانی ، دعا ہے سبز ہلالی پرچم ہمیشہ سربلند رہے، پاک چین تعلق خطے میں امن کی ضمانت ہے: ممنون حسین

انہوں نے کہا کہ آئینی ترمیم کا بل پہلے ہی پڑا ہوا ہے لیکن لگتا یوں ہے کہ 62 اور 63 کو ختم کرنے کی بجائے اسے وسعت دینے کی بات ہو رہی ہے، اس میں ججز ، جرنیلوں اور بیوروکریٹس کو بھی شامل کیا جائے گا۔ اس معاملے میں پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن کے درمیان کوئی نہ کوئی رابطہ ضرور ہے اور وہ ایک پیج پر ہیں۔

مزید : اسلام آباد


loading...