نواز شریف کی جان بچانے کیلئے کلثوم نواز نوابزادہ نصراللہ کے پاس گئیں

نواز شریف کی جان بچانے کیلئے کلثوم نواز نوابزادہ نصراللہ کے پاس گئیں
نواز شریف کی جان بچانے کیلئے کلثوم نواز نوابزادہ نصراللہ کے پاس گئیں

  


اسلام آباد (ویب ڈیسک) سینئر سیاستدان و مرکزی رہنما پیپلزپارٹی قمر زمان کائرہ نے انکشاف کیا ہے کہ ریلی کا شوکروایا جارہا ہے کہ نواز شریف کے ساتھ ریلی میں لاکھوں لوگ ہیں لیکن حقیقت میں ہزاروں بھی نہیں، فرض کریں اگر لاکھو ں لوگ بھی ہوں تو کیا فرق پڑے گا؟ان کی سزا ختم تو نہیں ہونی، ان کے ریفرنسز ختم تو نہیں ہوںگے۔ نواز شریف صرف پاور شو کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

پاکستان اور چین دوستی کے مضبوط رشتے میں بندھے ہیں،آج پورے پاکستان کیلئے جشن کا دن ہے،چینی نائب وزیراعظم

قمر زمان کائرہ نے کہا کہ اب جب نواز شریف خود پھنس چکے ہیں تو وہ یہ کہہ رہے ہیں کہ آرٹیکل 62 اور 63 ختم ہونا چاہیے۔ 1999ءمیں جب نواز شریف کی حکومت ختم ہوگئی تھی تو ان کی اہلیہ کلثوم نواز باہر نکلی تھیں، اس وقت وہ نوابزادہ نصراللہ کے پاس بھی گئیں کہ نواز شریف کی جان بچائی جائے اور ملک میں جمہوریت بحال کی جائے۔ اس وقت کلثوم نواز کی درخواست پر نوابزادہ نصر اللہ اور تمام جماعتیں نواز شریف کی جان بچانے کیلئے کوشش کرنے لگیں تو نواز شریف نے رات رات معاہدہ لکھا اور بال بچوں سمیت باہر فرار ہوگئے۔ اس وقت نوابزادہ نصراللہ نے نواز شریف کے بارے میں ایک جملہ کہا تھا کہ زندگی میں بڑی سیاست کی ہے ، پہلی دفعہ کسی کاروباری پر اعتماد کیا تھا، آج پتہ چلا ہے کہ کاروباری اور سیاستدان میں فرق کیا ہوتا ہے؟ نواز شریف ایک کاروباری آدمی تھا اس لئے نقصان دیکھ کر معاہدہ کرکے نکل گیا۔

مزید : اسلام آباد


loading...