جشن آزادی، اندرون سندھ لوگ صبح صبح پرچم اٹھائے سڑکوں نکل آئے

14 اگست 2018 (12:16)

عمرکوٹ (سید ریحان شبیر )جشن آزادی کی صبح سندھ کے سرحدی اضلاع عمرکوٹ تھرپارکر میں لوگ پاکستان زندہ آباد کے نعرے لگاتے ہوئے ہاتھوں میں پرچم لیے سڑکوں پر آگے پاکستان کی اکہتر سالہ تاریخ میں جشن آزادی کے موقع نہیں اتنا جوش ولولہ دیکھنے میں نہیں آیا عمرکوٹ تھرپارکر کے تمام  چھوٹے بڑے گاؤں گوٹھوں شہروں میں جشن آزادی کی بھرپور تقریبات منعقد کی گی عمرکوٹ میں سب سے بڑی مرکزی تقریب  گورنمنٹ ڈگری بوائز کالج عمرکوٹ میں منعقد کی گئی جہاں پر ضلعی چیرمین ڈاکٹر سید نور علی شاہ نے سلامی لی   ڈپٹی کمشنر عمرکوٹ طاہر سانگی ایس ایس پی عمرکوٹ سمیت دیگر افسران موجود تھے .

عمرکوٹ  پولیس کے چاق و چوبند دستے سلامی پیش کی سلامی پریڈ کی اس تقریب میں عمرکوٹ شہر کے تمام سرکاری سکولوں کے بہت بڑی تعداد میں طلبہ نے شرکت کی اس موقع مختلف سکولوں کے طلبہ نے ملی نغمے ٹیبلو سٹیج شو اور طلبہ نے ڈانڈیاں گیم پیش کرکے جشن آزادی کے پروگراموں کو چار چاند لگادیے سکولوں میں مٹھائیاں بھی تقسیم کی گئی عمرکوٹ کے معروف سیاسی سماجی رہنما شوکت ادیپوری کی جانب عمرکوٹ سٹی میں جشن آزادی کی ایک بڑی تقریب منعقد کی گی جس میں بڑا  وزنی کیک کاٹا گیا .

اس تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شوکت ادیپوری حاجی صابر اصغر علی منظر اقبال روشن علی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان لاکھوں قربانیوں کی بدولت حاصل ہوا پاکستان آج اللہ تعالی کے فضل کرم سے عالم اسلام کا واحد ایٹمی ملک ہے عمرکوٹ کے مدرسہ انوار القرآن فاروقیہ میں بھی جشن آزادی کی تقریب منعقد کی گی جس سے مفتی حماد اللہ سید فیصل شاہ وغیرہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کلمہ توحید کی بنیاد پر حاصل کیا گیا پاکستان کی سلامتی کےلیے ہم اپنا تن من دھن قربان کرنے کے لیے تیار ہے تھرپارکر ضلع کے تمام چھوٹے بڑے شہروں اسلام کوٹ ننگرپارکر چھاچھرو چلیہار ڈپیلو مٹھی سمیت گاؤں گوٹھوں میں جشن آزادی کی شاندار چھوٹی بڑی تقریبات کا انعقاد کیا گیا .

صبح سویر مساجد میں ملکی سلامتی کےلیے خصوصی دعائیں بھی کی گی فضاء پاکستان زندہ آباد کے نعروں سے گونج اٹھی نوجوانوں نے ملی نغموں اور ڈھول کی تھاپ پر والہانہ رقص کیے.

مزیدخبریں