ٹیکنیکل بنیادوں پربجلی چوری، مافیا وارداتوں میں سب سے آگے

ٹیکنیکل بنیادوں پربجلی چوری، مافیا وارداتوں میں سب سے آگے

ملتان (سٹاف رپورٹر) بجلی چوری کے لئے میٹرمیں مخصو ص”چپ“ نصب کرکے ریموٹ کنٹرول کے ذریعے بند کرنے کا سلسلہ تھم نہ سکا۔بتایا گیا ہے کہ بجلی کے میٹروں میں مخصوص”چپ“ لگائی جاتی ہے جس کے باعث کنکشن پر لوڈ چل رہا ہوتا ہے مگر میٹر بند ہوتا ہے۔ میپکو سرویلنس ذرائع (بقیہ نمبر7صفحہ12پر)

کے مطابق اگر ریموٹ کنٹرول میٹر چل رہا ہوتو اس کو ٹریس نہیں کیاجاسکتا۔ ہوتا یوں ہے کہ بجلی چور ریموٹ کنٹرول کے ذریعے میٹر بند کر دیتے ہیں جبکہ لوڈ چل رہا ہوتا ہے تو اچانک چیکنگ کے دوران بجلی چوروں کو موقع نہیں ملتاکہ وہ میٹر کو ریموٹ کنٹرول کے ذریعے چالوکر دیں۔ اس طرح بجلی چوری پکڑی جاتی ہے۔ سرویلنس ذرائع کے مطابق تھانوں میں ایف آئی آرز درج کرائی جاتی ہیں۔ اس پر پولیس چاہے تو بجلی چور صارفین سے تفتیش کرکے اس سے میٹر میں ریموٹ کنٹرول لگانے والے ملزمان کے نام اگلوائے جا سکتے ہیں۔ اس سے ریموٹ کنٹرول کے ذریعے بجلی چوری والے دیگر کئی کنکشن ٹریس ہو سکتے ہیں۔ ایف آئی اے نے چھاپہ مار کر ایک آئل ملز میں ریموٹ کنٹرول کے ذریعے بجلی چوری پکڑی تھی مگر آج تک سراغ نہیں مل سکا کہ میٹر میں ریموٹ کنٹرول کی ”چپ“ لگانے میں کون سا گروہ ملوث ہے اور اس کے کتنے ارکان ہیں اور کہاں کہاں میٹروں میں اس گروہ نے ریموٹ کنٹرول کی ”چپ“ نصب کی ہیں۔

بجلی چوری

مزید : ملتان صفحہ آخر