سیکولر اور جمہوری بھارت انتہا پسند مودی کے ہاتھوں قتل ہو چکا: فردوس عاشق

سیکولر اور جمہوری بھارت انتہا پسند مودی کے ہاتھوں قتل ہو چکا: فردوس عاشق

  

سیالکوٹ(اے این این) وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ عالمی انسانی حقوق کی تنظیمیں دیکھیں مقبوضہ کشمیر کو جیل میں تبدیل کردیا گیا ہے اور کشمیری مسلمانوں کو مودی حکومت نے جبر کرکے عید کی نماز اور قربانی سے روکا۔سیالکوٹ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوا ن نے کہا کہ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں علاج معالجے کی سہولتیں دستیاب نہیں ہیں اور بھارت بھول چکاہے کہ جذبے پابند سلاسل نہیں ہوسکتے۔دریں اثناء سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنی ٹویٹ میں فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ سیکولر اور جمہوری بھارت مودی کے ہاتھوں قتل ہوچکا ہے۔فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ ہندوتوا کی سوچ پر کاربند مودی سرکار نے بھارتی تسلط کی پالیسی نہ ترک کی تو خطے کے امن کو شدید خطرات لاحق ہیں۔ بھارت اپنے انتہا پسندانہ رویے پر نظر ثانی کرے۔ کشمیر ایک متنازع علاقہ ہے جس کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں ہی ممکن ہے۔معاون خصوصی نے کہا کہ عید الضحیٰ کے روز مسلمانوں کو ان کے مقدس تہوار منانے سے روکنا ثابت کرتا ہے کہ سیکولر اور جمہوری بھارت مودی کے ہاتھوں قتل ہوچکا ہے۔ کشمیریوں اور پاکستانیوں کی خوشیاں اور غم سانجھے ہیں۔ کشمیر میں آزادی کا سورج طلوع ہو کر رہے گا۔فردوس عاشق اعوان نے مزید کہا کہ کوئی جبر، کوئی ظلم، کوئی کرفیو، کوئی ہتھکڑی اور کوئی قیدخانہ کشمیریوں کو غلام نہیں بنا سکتا۔ عید کے دن کشمیریوں کو ان کی مذہبی رسومات ادا کرنے سے روکنا ثابت کرتا ہے کہ بھارت کشمیر پر غاصبانہ قبضہ کر رہا ہے۔ بھارت نے تسلط کی پالیسی نہ ترک کی تو خطے کے امن کوخطرات لاحق ہیں۔

 فردوس عاشق اعوان

مزید :

صفحہ اول -