حکومت کی طرف سے عید کے تینوں روز بجلی لوڈ شیڈنگ کے دعوے جھوٹ کا پلندہ ثابت

حکومت کی طرف سے عید کے تینوں روز بجلی لوڈ شیڈنگ کے دعوے جھوٹ کا پلندہ ثابت

چارسدہ (بیو رو ڑپورٹ)وفاقی ح کومت کی طرف سے عید کے تینوں روز بجلی لوڈ شیڈنگ کے دعوے جھوٹ کا پلندہ ثابت ہوئے۔بجلی لوڈ شیڈنگ کے ساتھ ساتھ سوئی گیس کی کم پریشر نے عوام کا پارہ چڑھا دیا۔ بجلی اور سوئی گیس لوڈشیڈنگ کے ستائے عوام سڑکوں پر نکل آئے۔ضلع بھر میں احتجاجی مظاہرے۔تفصیلات کے مطابق عید الضحیٰ کے موقع پر وفاقی حکومت کی طرف سے عید کے تینوں روز بجلی لوڈ شیڈنگ کے دعوے جھوٹ کا پلندہ ثابت ہوئے۔ عید کے پہلے ہی رو ز سے بجلی لوڈ شیڈنگ اور اوپر سے سوئی گیس کے کمر پریشر سے شہری عاجز آگئے۔ بجلی کی آنکھ مچولی، کم وولٹیج کی وجہ سے گھروں میں بجلی سے چلنے والی قیمتی آلات ناکارہ ہو گئے۔شدید گرمی، بجلی لوڈ شیڈنگ اور سوئی گیس کی کم پریشر کی وجہ سے عوام کا پارہ چڑھ گیا اور سڑکوں پر نکل آئے۔ سرڈھیری, ترنگزئی, بہلولہ, اتمانزئی,عمرزئی, ہری چند تنگی، شبقدر،ایم سی ون،ٹو،تھری، فور سمیت دیگر علاقوں میں ہزاروں عوام عید کے دونوں روز سڑکوں پر آکر دھرنا دینے اور روڈ بلاک کرنے پر مجبور ہوئے۔ سرڈھیری میں جماعت اسلامی کے تحصیل کونسلر ہارون خان کی قیادت میں عوام نے مردان چارسدہ روڈ بلاک کی اور ناروا لوڈ شیڈنگ اورکم وولٹیج کے خلاف زبردست نعرہ بازی کی۔ اسی طرح ترنگزئی میں مساجد میں اعلانات کرکے عوام سڑکوں پر نکل آئے۔ اس موقع پر اے این پی, جے یو آئی,کیو ڈبلیو پی اور دیگر جماعتوں کے کارکنوں نے ترنگزئی کے مقام پر پشاور اور راولپنڈی شاہراہ پر ٹائر جلاکر روڈ بلاک کیا۔ احتجاجی مظاہروں سے خطاب کر تے ہوئے مقررین نے کہا کہ بجلی کی آنکھ مچولی اور کم وولٹیج نے صارفین کو پریشان کر دیاہے۔عمرزئی میں تحصیل نائب ناظم ڈاکٹر الطاف احمد اور دیگر کی قیادت میں عوام نے احتجاج کے طور پر روڈ بند کردیا۔اس طرح بہلولہ اور ہر چند میں بھی مشتعل مظاہرین نے روڈ بلاک کی۔ چارسدہ کے شہری علاقہ مسعود خیل اور چارسدہ ٹاون میں وولٹیج 100 سے بھی نیچے گر گیا ہے جس کے باعث الیکٹرانک اشیاء جل گئی۔ شبقدر کے اکثر علاقوں میں 10 سے 15 گھنٹے تک مسلسل لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے.اس طرح تحصیل تنگی میں بجلی کی آنکھ مچولی نے عوام کو چکرا دیا۔

لوڈ شیڈنگ

مزید : پشاورصفحہ آخر