لاہور کے شاپنگ مال میں سیلز گرل پر تشدد کرنے والی خاتون گرفتار، شناخت کیا ہوئی اور گرفتاری کیسے عمل میں آئی؟ تفصیلات منظرعام پر

لاہور کے شاپنگ مال میں سیلز گرل پر تشدد کرنے والی خاتون گرفتار، شناخت کیا ...
لاہور کے شاپنگ مال میں سیلز گرل پر تشدد کرنے والی خاتون گرفتار، شناخت کیا ہوئی اور گرفتاری کیسے عمل میں آئی؟ تفصیلات منظرعام پر

  


لاہور(ویب ڈیسک) تھانہ فیکٹری ایریا کے علاقے میں  پیکجز شاپنگ مال میں شوہر کے ساتھ مل کر سیلزگرل کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنا نے والی خاتون کو گرفتار کرلیا گیا جس کی شناخت  صدف طارق کے نام سے ہوئی ہے ، خاتون کی گرفتاری  سی سی ٹی وی فوٹیج ، گاڑی اور موبائل نمبر کے ذریعے ہوئی جس کے بعد اسے حراست میں لے لیا گیا۔

ایس ایچ او تھانہ فیکٹری ایریاانسپکٹر فاروق اصغر اعوان کے مطابق لاہور کے نجی شاپنگ مال میں سیلز گرل پر بااثر خاتون صدف طارق کا ظالمانہ تشدد کا مقدمہ سیکورٹی آفیسر خواجہ نعمان کی درخواست پر درج کیاگیا اور پولیس نے بااثر خاتون کو حراست میں لے لیا۔ انسپکٹر فاروق اصغر اعوان کے مطابق پولیس نے دھمکیاں دینے اور تشدد کرنے کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کر تے ہوئے ملزمہ صدف طارق کو حراست میں لے لیا ہے خاتون سے قانون کے مطابق تفتیش کی جا رہی ہے۔ادھرایف آئی آر کے مطابق ملزمہ اپنے شوہر ا اور ایک لڑکی کے ساتھ نجی مال میں آئی اور ایک شاپ پر جا کرسیلز گرل اینا لیز کو لپ اسٹک دکھانے کا کہا، اسی اثنا میں سیلز گرل اور خاتون کے درمیان تکرار ہوگئی ، خاتون نے سیلز گرل کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دیں، سیلز گرل کو دھکے دئیے اور سر کے بال پکڑ کر زمین پر دے مار اور بالوں سے پکڑ کر گھیسٹا ۔

ایف آئی آرمیں کہا گیا ہے کہ سیلز گرل کو بچانے آنے والی دیگر سیلز گرلز پر بھی خاتون نے تشدد کیا، سیکورٹی اہلکار افشاں ، روزینہ اور مصباح کو بھی تشدد سے منع کرنے پر مارا پیٹا گیا، ، خاتون نے پیپر کٹر سے سیکورٹی سپروائزر پر بھی حملہ کیا جس سے اس کی انگلی زخمی ہوئی، خاتون کے ساتھ تشدد کی کارروائی میں اسکا شوہر حمزہ بھی شامل تھا۔

مزید : جرم و انصاف /علاقائی /پنجاب /لاہور