گرمی اور حبس میں زیادہ گوشت کھانے سے لوگوں کی بڑی تعداد سرکاری اور پرائیویٹ ہسپتالوں میں پہنچ گئی

گرمی اور حبس میں زیادہ گوشت کھانے سے لوگوں کی بڑی تعداد سرکاری اور پرائیویٹ ...
گرمی اور حبس میں زیادہ گوشت کھانے سے لوگوں کی بڑی تعداد سرکاری اور پرائیویٹ ہسپتالوں میں پہنچ گئی

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)عید کے تیسرے روز   بسیارخوری نے شہریوں کو بیمار کر دیا ،حبس اور گرمی کے موسم میں حد سے زیادہ گوشت کھانے سے لوگوں کی بڑی تعداد سرکاری اور پرائیویٹ ہسپتالوں میں پہنچ گئی۔

نجی ٹی  وی کے مطابق ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ گرمی کے موسم میں گوشت کا بے جا استعمال بیماریوں کا موجب بنتا ہے،اس کے کھانے میں احتیاط ضروری ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اکثر لوگ عید کے موقع پر قیمے کی ٹکیاں اور کباب وغیرہ بناکر کھاتے ہیں اور بسا اوقات کھانے میں اعتدال بھی نہیں برتا جاتا جبکہ قربانی کا گوشت کچا رہ جانے کی وجہ سے بھی مضر صحت ہو جاتا ہے جبکہ اکثر ٹکیاں اور کباب کچے رہ جاتے ہیں جو انسانی صحت کیلئے نقصان دہ ہوتے ہیں،لوگ ایسے موقعوں پر بے احتیاطی کرتے ہیں جو انسانی صحت کیلئے خطرناک ثابت ہو سکتی ہے اس لئے کھانے پینے میں احتیاط کریں۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور