بھارت کے دباؤ پر ایف اے ٹی ایف قوانین بنائے جارہے ہیں، فضل الرحمن 

 بھارت کے دباؤ پر ایف اے ٹی ایف قوانین بنائے جارہے ہیں، فضل الرحمن 

  

اسلام آباد (این این آئی) جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ بھارت اور دنیا کے دباؤ پر ایف اے ٹی ایف قوانین بنائے جارہے ہیں،حکومت پاکستان نے اقوام متحدہ کو کشمیر کے حوالے سے قراردادوں پر عمل کا کیوں نہیں کہا؟ہماری سفارتکاری کہاں گئی،اگر کل اقوام متحدہ یا ایف اے ٹی ایف کشمیر کے حریت پسندوں کو بھی دہشتگرد قرار دیتی ہے تو کیا کریں گے،نااہل حکومت سے بازو مروڑ کا قانون سازی کی جارہی ہے، ایم ایم اے اور کچھ دوسری جماعتوں کو قانون سازی کے حوالے سے مشاورت سے دور رکھا گیا،یہ جمہوریت کے خلاف ہے،پی پی دور میں ہم بلیک لسٹ میں گئے،اگلی حکومت آئی تو پھر وائٹ لسٹ پر آگئے،پی پی پی اور ن لیگ کو ایسی قانون سازی پر کیوں مجبور نہیں کیا جاسکا،ان قوانین کے بعد پاکستان آزادی سے کوئی فیصلہ نہیں کرسکے گا،پی پی پی ن لیگ ابھی تک ہمارے تحفظات دور نہیں کر پائی،اپوزیشن کی بڑی جماعتیں رابطہ کررہی ہیں،جب تحفظات دور ہوجائیں گے تو اے پی سی بھی ہوجائے گی۔ جمعرات کو یہاں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ پارلیمنٹ میں جوقانون سازی کی جارہی ہے اس پر جے یو آئی کا ایک موقف رکھا،ان بلز کی جے یو آئی نے مخالفت بھی کی اور پاکستان کے منافی قرار دیا۔ انہوں نے کہاکہ ارکان پارلیمنٹ کو مشاورت کا وقت دیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ عجیب بات ہے کہ سپیکر صاحب چند جماعتوں کو بلاکر مشورہ کیا جاتا ہے،ایم ایم اے اور کچھ دوسری جماعتوں کو مشاورت سے دور رکھا گیا،یہ جمہوریت کے خلاف تھا،نہ بلز سمجھنے کا موقع دیا جاتا ہے نہ مشاورت کی جاتی ہے۔

 فضل الرحمن 

مزید :

صفحہ آخر -