بھارتی حکومت نے سیکیولرسٹیٹ کودفن کر دیا،وزیر خارجہ  

  بھارتی حکومت نے سیکیولرسٹیٹ کودفن کر دیا،وزیر خارجہ  

  

 اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ افغانستان میں قیام امن سے پورے خطے میں امن واستحکام کی راہ ہموار ہوگی۔ گزشتہ روزوزیراعظم کے نمائندہ خصوصی برائے افغانستان ایمبیسڈر محمد صادق نے وزارت خارجہ میں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی سے ملاقات کی۔اس موقع پر وزیر خارجہ نے کہا کہ بین الافغان مذاکرات کے انعقاد سے افغانستان میں مستقل اور دیرپا قیام امن میں مدد ملے گی۔ افغانستان میں قیام امن سے پورے خطے میں امن واستحکام کی راہ ہموار ہوگی۔ پاکستان، افغان امن عمل سمیت خطے میں امن واستحکام کیلئے اپنا مصالحانہ کردار ادا کرتا رہے گا۔دریں اثناء اپنے ایک بیان میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ  بھارت میں توہین رسالت کے واقعے نے مسلمانوں کے جذبات کومجروح کیا، ہیومین رائٹس واچ،ایمنسٹی انٹرنیشنل و دیگرعالمی تنظیموں کو نوٹس لینا چاہیے۔ بھارت میں آج مسلمان اقلیت محفوظ نہیں، مسجد کو شہید کرکے مندر بنانا قطعی طور پر درست نہیں، جذبات بھی مسلمانوں کے مجروح کرتے ہیں اور شہادتیں بھی ہوتی ہیں اور مسلمانوں کو ہی گرفتارکیا گیا۔انہوں نے کہا کہ سیکیولراسٹیٹ کو تو بھارت کی اس حکومت نے دفن کر دیا، آج بھارت میں ایک ہندواسٹیٹ جنم لے رہی ہے۔یہ اندرونی مسئلہ نہیں ہے یہ انسانیت کا مسئلہ ہے، پاکستان کوحق حاصل ہے کہ اس معاملے کو اٹھائے۔علاوہ ازیں وزیر خارجہ نے وژن ایف او کے تحت کرونا عالمی وبائی چیلنج کے دوران دنیا بھر میں نمایاں خدمات سرانجام دینے والے پاکستانیوں کی پذیرائی کیلئے ”فارن منسٹرز آنرز لسٹ“کا اعلان کردیا ہے۔ فارن منسٹرز آنرز لسٹ میں شامل بیرون ملک مقیم 86پاکستانیوں کو5 مختلف کیٹیگریز کے تحت منتخب کیا گیاہے۔

وزیر خارجہ 

مزید :

صفحہ آخر -