رکشہ ڈرائیورغربت سے تنگ،3بچے فروخت کرنیکا اعلان 

رکشہ ڈرائیورغربت سے تنگ،3بچے فروخت کرنیکا اعلان 

  

  رحیم یار خان (نمائندہ پاکستان)‘غربت سے تنگ رکشہ ڈرائیور بچوں کو بیچنے کیلئے روڈ پر نکل آیا۔ تفصیل کے مطابق گلشن(بقیہ نمبر1صفحہ12پر)

 عثمان کا رہائشی غریب رکشہ ڈرائیور شاہدعلی تین بچوں سمیت حالات سے تنگ آ کر ڈسٹرکٹ پریس کلب پہنچ گیا‘ شاہد علی نے میڈیا کوبتایا کہ جس دن سے لاک ڈاؤن ہوا ہے ایک روپے کا بھی کام نہیں ملا‘ واپڈا کی جانب سے 40ہزار روپے کا بل بھیج دیاگیا اور بل ادا نہ کرنے پر واپڈا والے میٹر کاٹ کرلے گئے۔ اب وہ مجبور ہوکر اپنے تین بچے فروخت کرنے کیلئے گھر سے نکلا ہے۔ شاہد علی نے بتایا کہ دوسال سے مکان کا کرایہ نہیں دیا جبکہ ایک سال قبل بل ادا نہ کرنے پر گیس کا میٹر بھی اتار لیا گیا تھا‘ گذشتہ دوسال سے بچے بھی سکول نہیں جارہے۔ شاہدعلی نے بتایا کہ روزگار نہ ہونے کی وجہ سے گھر میں فاقے ہورہے ہیں‘ لوگوں کا بچا کچھا کھانا لاکر گذارہ کررہے تھے اب یہ حالت ہے کہ تین دن سے بچوں نے کھانا نہیں کھایا۔ شاہد علی نے بتایا کہ حکومت نام کی کوئی چیز نہیں ہے‘ ایک ہفتے سے مقامی ایم این اے‘ ایم پی اے کے پاس چکر لگا رہا ہوں لیکن کوئی بات سننے کو تیار نہیں‘ شدید گرمی میں بجلی کے بغیر بچوں کا برا حال ہے‘ بچوں کی حالت دیکھی نہ گئی تو مجبورہوکر بچے فروخت کرنے نکل پڑا ہوں تاکہ واپڈا کا بل ادا کرسکوں۔شاہد علی نے اعلی حکام اور مخیر افراد سے مطالبہ کیا کہ اس کی مدد کی جائے۔

رکشہ ڈرائیور

مزید :

ملتان صفحہ آخر -