ڈاکٹر کا کورونا سے انتقال، ہسپتال نے اتنا زیادہ بل بنادیا کہ چندہ اکٹھا کرنا پڑ گیا، پڑوسی ملک سے انتہائی شرمناک خبر آگئی

ڈاکٹر کا کورونا سے انتقال، ہسپتال نے اتنا زیادہ بل بنادیا کہ چندہ اکٹھا کرنا ...
ڈاکٹر کا کورونا سے انتقال، ہسپتال نے اتنا زیادہ بل بنادیا کہ چندہ اکٹھا کرنا پڑ گیا، پڑوسی ملک سے انتہائی شرمناک خبر آگئی

  

کلکتہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست مغربی بنگال میں ایک ڈاکٹر کورونا کی وجہ سے ہلاک ہوگیا جس کے بعد ہسپتال والوں نے اس کے گھر والوں کو لاکھوں روپے کا بل تھمادیا، اتنا موٹا بل دیکھ کر پورے علاقہ کے ہوش اڑ گئے، لوگوں نے چندہ جمع کرکے بل ادا کیا۔

ڈاکٹر پردیپ کمار بھٹاچاریہ کلکتہ میں ایک خدا ترس انسان کے طور پر مشہور تھے، جب سب ڈاکٹرز کورونا کے خوف سے اپنے گھروں میں چھپ کر بیٹھ گئے تو انہوں نے اپنے کلینک پر کئی مریضوں کا مفت علاج کیا۔

انسانیت کی اسی خدمت کے دوران ڈاکٹر بھٹا چاریہ جولائی کے پہلے ہفتے میں خود کورونا کا شکار ہوگئے جس کے بعد انہین ایک پرائیویٹ نرسنگ ہوم میں داخل کرایا گیا، وہ ایک مہینے تک وینٹی لیٹر پر رہنے کے بعد 10 اگست کو چل بسے ۔

ڈاکٹر پردیپ کمار بھٹا چاریہ کی کورونا سے موت کے بعد ہسپتال نے ان کے گھر والوں کو 18 لاکھ 34 ہزار روپے کا بل تھمادیا۔ چونکہ ڈاکٹر بھٹا چاریہ اکثر مریضوں کا مفت علاج کیا کرتے تھے اس لیے ان کے گھر والوں کے پاس اتنی دولت نہیں تھی کہ وہ اتنا بڑا بل جمع کراسکتے ۔ جس کے بعد اہل علاقہ نے مل کر ہسپتال کا بل ادا کرنے کیلئے چندہ اکٹھا کیا، اسی دوران حکومت بھی حرکت میں آگئی اور کورونا کے مریض کا اتنا بھاری بل بنانے والے ہسپتال سے جواب طلب کرلیا، ہسپتال انتظامیہ نے کارروائی کے خوف سے بل میں 3 لاکھ روپے کی کمی کردی۔

مزید :

کورونا وائرس -