وفاق صوبوں کی شکایات حل کرنے کی بجائے۔۔۔سینیٹرشیری رحمان نےتحریک انصاف حکومت پرسنگین ترین الزام عائد کردیا

وفاق صوبوں کی شکایات حل کرنے کی بجائے۔۔۔سینیٹرشیری رحمان نےتحریک انصاف ...
وفاق صوبوں کی شکایات حل کرنے کی بجائے۔۔۔سینیٹرشیری رحمان نےتحریک انصاف حکومت پرسنگین ترین الزام عائد کردیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان پیپلز پارٹی کی مرکزی رہنما سینیٹر شیری رحمان نے کہا ہے کہ وفاق صوبوں کی شکایات حل کرنے کے بجائے نئے پینڈورا باکس کھول رہا ہے، تباہی سرکار کی نظر کراچی کی معیشت پر ہے،وفاقی حکومت شروع دن سے سندھ کے ساتھ غیر آئینی سلوک کررہی ہے،سندھ وفاق کی کالونی نہیں،حکومت صوبوں اور لوگوں کے بیچ نفرتیں مت پیدا کرے،پہلے ہی صوبوں کو وفاق سے شکایات ہیں۔

 سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ جب سے تحریک انصاف کی حکومت آئی ہے، تب سے سندھ کے خلاف غیرمناسب بیانات آ رہے ہیں،وزرا اور اٹارنی جنرل کے بیان کی پارلیمان میں وضاحت مانگی جائے گی، کبھی آرڈیننس کے ذریعے ملک چلانے کی بات کی جاتی ہے تو کبھی صوبائی حکومت گرانے کی دھمکی دی جاتی ہے،وفاقی حکومت کبھی گورنر راج لگانے کی دھمکی دیتی ہے،کبھی کراچی کو وفاق کے زیر نگرانی کرنے کی باتیں سامنے آتی ہیں۔سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ تباہی سرکار کو معلوم ہونا چاہئےکہ ملک میں جمہوریت ہے آمریت نہیں، آپ پہلے بیس کلو میٹر پر مبنی اسلام آباد کو تو چلا کر دکھائیں، اس کے بعد کراچی کی باتیں کریں،وفاق کی ذمہ داری ہے کہ تمام صوبوں کو ساتھ لے کر چلے۔

سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ تباہی سرکار ہر معاملے پر صوبوں کے حقوق کو نظرانداز کر رہی ہے،وفاقی حکومت ٹیکس ہدف پورا کرنے میں ناکام ہوتی تو الزام سندھ پر ڈالا جاتا، سندھ اپنے ٹارگٹ سے زیادہ ٹیکس جمع کر رہا ہے،کراچی ملک کا ستر فیصد ریونیو پیدا کرتا ہے، تباہی سرکار کی نظر کراچی کی معیشت پر ہے،وفاقی حکومت شروع دن سے سندھ کے ساتھ غیر آئینی سلوک کررہی ہے،سندھ وفاقی کی کالونی نہیں،حکومت صوبوں اور لوگوں کے بیچ نفرتیں مت پیدا کرے،پہلے ہی صوبوں کو وفاق سے شکایات ہیں،وفاق صوبوں کی شکایات حل کرنے کے بجائے نئے پینڈورا باکس کھول رہا ہے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -