پنجاب اسمبلی،حکومت اور اپوزیشن ارکان میں تلخ کلامی،ہلڑ بازی 

پنجاب اسمبلی،حکومت اور اپوزیشن ارکان میں تلخ کلامی،ہلڑ بازی 

  

لاہور (آن لائن)پینل آف دی چیئر پنجاب اسمبلی وسیم بدوزئی کی زیر صدارت جمعہ کے روز ہونیوالا اسمبلی اجلاس فریقین کی ہلڑ بازی، نعرے بازی اور مچھلی منڈی کے ماحول کی نذرہوگیا۔ جسکے بعد پینل آف دی چیئر نے اسمبلی کا اجلاس غیر معینہ مدت تک کیلئے ملتوی کردیا۔ پنجاب اسمبلی کے ایوان میں دونوں بینچوں کے ارکان اسمبلی کے درمیان تلخ جملوں اور نعرے بازی کا سلسلہ اس وقت شروع ہوا۔ جب پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رکن پنجاب اسمبلی ارشد ملک نے ایوان میں وزیراعظم عمران خان کے بارے میں ناپسندیدہ ریمارکس دئیے جس پر حزب اقتدار کے ارکین پنجاب اسمبلی مشتعل ہوگئے اور دونوں اطراف کے ارکان اسمبلی نے ایک دوسرے کی قیادت کیخلاف نعرے بازی شروع کردی۔ اپوزیشن کے اراکین اسمبلی اپنے بینچوں پر کھڑے ہوگئے اور انہوں نے ایجنڈے کی کاپیاں پھاڑ ڈالی۔ اس صورتحال کو دیکھتے ہوئے پینل آف دی چیئر نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے دو ارکان پنجاب اسمبلی ارشد ملک اور مرزا جاوید کی اسمبلی رکنیت ایک ایک روز کیلئے معطل کی۔ تو پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن اراکان اسمبلی اجلاس کی کارروائی کا بائیکاٹ کر گئے اور جاتے جاتے ایوان میں فورم کی نشاندہی کرگئے۔ جس پر سپیکر آف دی چیئر نے اجلاس کی کارروائی 15 منٹ کیلئے ملتوی کردی۔ 15 منٹ کے بعد اجلاس دوبارہ شروع ہونے پر ایوان میں موجود اراکین کی گنتی کی گئی تو کورم پورا نکلا جس پر حسب اقتدار کے ارکان نے بنچ بجا کر کورم مکمل ہونے کا خیر مقدم کیا۔ یہ بھی بتایا گیا ہے کہ جمعہ کے روز ہونیوالے اجلاس میں کورم کی تین مرتبہ نشاندہی کی گئی۔ لیکن تینوں مرتبہ گنتی کے بعد گنتی کے بعد کورم پورا نکلا۔ 

پنجاب اسمبلی 

مزید :

صفحہ آخر -