رحیم یارخان:13سالہ لڑکی سے بداخلاقی

رحیم یارخان:13سالہ لڑکی سے بداخلاقی

  

 رحیم یارخان (بیورو رپورٹ)نواحی علاقہ ترنڈہ مدھو خان میں دو(بقیہ نمبر7صفحہ18پر)

 ملزمان نے 13 سالہ لڑکی کو موٹر سائیکل پر اغوا کرکے آم کے باغ میں لیجاکر بداخلاقی کا نشانہ بنا ڈالا پولیس نے ساز باز کرکے ناقص تفتیش کرتے ہوئے مقدمہ خارج کردیا ڈی این اے نہیں کرایا گیا والدہ اور بھائی کا الزام اے ایس پی نے میرٹ پر کارروائی کرنے کی یقین دہانی کرادی۔ تفصیل کے مطابق تھانہ ظاہر پیر کی حدود ترنڈہ مدھو خان کی رہائشی صغراں بی بی نے متاثرہ بیٹی اور بیٹے کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ دو ماہ قبل اسکی 13 سالہ بیٹی شازیہ بی بی کو ملزمان محمد عدنان اور اشرف بلال نے موٹر سائیکل پر اغوا کرکے آم کے باغ میں لئے گئے جہاں دونوں ملزمان نے بداخلاقی کا نشانہ بنایا جس پر پولیس نے مقدمہ نمبری 370/21 درج کیا تاہم تفتیشی افسر نے ملزمان سے ساز باز کرکے ناقص تفتیش کرتے ہوئے مقدمہ خارج کر دیا ہے۔ سابقہ ایس ایچ او جام احسان الہی اورتفتیشی عبدالقادر پہلے روز سے ملزمان کی پشت پناہی کر رہے ہیں۔صغراں بی بی نے بتایا کہ اسکی بیٹی حاملہ ہو گئی ہے پولیس نے ڈی این اے تک نہیں کروایا۔ والدہ صغراں بی بی بیٹے اور بیٹی کے ہمراہ اے ایس پی سید سلیم شاہ کے پاس پیش ہوگئے جنہوں نے انصاف کی یقین دہانی کرائی ہے۔ والدہ صغراں بی بی نے مطالبہ کیا کہ انکا مقدمہ بحال کرکے میرٹ پر تفتیش کی جائے اور انصاف مہیا کیا جائے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -