شرجیل میمن کو بیرون ملک جانے کی مشروط اجازت دے دی گئی 

شرجیل میمن کو بیرون ملک جانے کی مشروط اجازت دے دی گئی 

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ ہائیکورٹ نے  سابق صوبائی وزیراطلاعات شرجیل میمن کی بیرون ملک جانے سے متعلق درخواست ٹرائل کورٹ کی اجازت سے مشروط کردی۔ جسٹس محمد اقبال کلہوڑو اور جسٹس شمس الدین عباسی پر مشتمل دو رکنی بینچ کے روبرو جیالے رہنما شرجیل میمن کا بیرون ملک جانے کی اجازت سے متعلق درخواست پر سماعت ہوئی۔ شرجیل میمن کے وکیل علی واحد ایڈوکیٹ نے موقف دیا کہ نام ای سی ایل سے نکالنے کی استدعا نہیں کر رہے۔ صرف ایک بار نام ای سی ایل سے نکالنے کی استدعا ہے۔ بیٹی کو بوسٹن یونیورسٹی چھوڑنے کے لیے صرف ایک بار جانے کی اجازت دی جائے۔ نیب پراسیکیوٹر نے شرجیل میمن کو بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کی مخالفت کردی۔ عدالت نے نیب پراسیکیوٹر شہباز سہوترا سے استفسار کیا بتائیں، آپ کا کیا موقف ہے؟ پراسیکیوٹر نیب نے موقف اپنایا کہ شرجیل میمن کو بیرون ملک جانے کی اجازت نہ دی جائے۔ شرجیل میمن کیخلاف 2 ریفرنسز زیر سماعت ہیں۔ بیرون ملک جانے سے متعلق اجازت ٹرائل کورٹ ہی دے سکتی ہے۔ علی واحد ایڈوکیٹ نے موقف اپنایا کہ صرف ایک ماہ کی مہلت مانگ رہے ہیں۔ عدالت نے استفسار کیا کون سی تاریخوں میں بیرون ملک جائیں گے؟ علی واحد ایڈوکیٹ نے موقف دیا کہ جو ٹرائل کورٹ تاریخ دے گی، ان دنوں میں بیرون ملک چلے جائیں گے۔ عدالت نے شرجیل میمن کی بیرون ملک روانگی کو ٹرائل کورٹ کی اجازت سے مشروط کردیا۔ عدالت نے ریمارکس دیئے اگر ٹرائل کورٹ اجازت دے تو شرجیل میمن ایک ماہ کے لیے بیرون ملک جا سکتے ہیں اور انہیں 10 لاکھ کی ضمانت جمع کرانا ہوگی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -