ایس آئی یو ٹی میں عطیہ  اعضا کے عالمی دن کا انعقاد

ایس آئی یو ٹی میں عطیہ  اعضا کے عالمی دن کا انعقاد

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ انسٹی ٹیوٹ آف یورولوجی اینڈ ٹرانسپلانٹیشن (ایس آئی یو ٹی)میں عطیہ اعضا کا عالمی دن  منایا گیا، جو ہر سال 13 اگست کو منایا جاتا ہے۔اس دن کو منانے کا بنیادی مقصد قیمتی انسانی جانیں بچانے کیلئے  اعضا کے عطیہ کی اہمیت کے بارے میں  شعو راجاگر کرنا   ہے۔ایس آئی یو ٹی کے طبی ماہرین نے اعضا کی ناکارہ ہونے کی وجہ سے ہونے والی اموات کی تشویشناک صورتحال  پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں ہر سال ڈیڑھ لاکھ سے زائد افراداعضا کے ناکارہ ہونے  سے انتقال کر جاتے ہیں،جس  میں گردے ناکارہ ہونیکے  40،000، جگر کے 70،000 اور دل کے 15،000 مریض شامل ہیں۔مقررین نے وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ دل، جگر، گردے، آنتیں، پھیپھڑوں، لبلبہ اور قرنیہ   عطیہ کئے جا سکتے   ہیں، اور انہیں ایسے مریضوں میں ٹرانسپلانٹ  کیا جاتا ہے جن کے اعضا ناکارہ ہو چکے ہوں اور انکی زندگی  اعضا کے ٹرانسپلانٹ کے ذریعے بچائی جا سکتی ہو۔ قرآن حکیم میں اللہ تعالی نے فرمایا ہے "جس نے ایک انسان کی جان بچائی  اس  نے گویا  پوری انسانیت کو بچا لیا "۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -