زمبابوے کرکٹ کا مالی بحران پھر شدت اختیار کرگیا، فرسٹ کلاس میچز منسوخ

زمبابوے کرکٹ کا مالی بحران پھر شدت اختیار کرگیا، فرسٹ کلاس میچز منسوخ

ہرارے(نیٹ نیوز)زمبابوے کرکٹ کا مالی بحران ایک بار پھر شدت اختیار کرگیا۔ بورڈ حکام نے رقم کی کمی کے سبب موجودہ سیزن میں باقی تمام فرسٹ کلاس میچز منسوخ کردئیے ہیں۔ بورڈ ملازمین کو نومبر کی تنخواہ 50 فیصد جبکہ دسمبر کی تنخواہ بعد میں دی جائے گی۔ دسمبر کی تنخواہیں وسط جنوری 2018 تک ادا کی جائیں گی ۔

دوسری جانب زمبابوے کرکٹ کے کچھ اسٹاف کو سال کے آخر تک کام کرنے کی ہدایات بھی کی گئیں ہیں تاکہ اس بات کو یقینی بنا سکیں کہ مارچ میں ورلڈ کپ کوالیفائر ز کیلئے سہولیات تیار رہیں ۔زمبابوے کرکٹ بورڈ پانچ کرکٹ اسٹیڈیمز کی تزین و آرائش پر کام کر رہا ہے۔ جس میں ہرارے اسپورٹس کلب ،اولڈ ہرارینز ، کوئین اسپورٹس کلب ،بلاوائیو ایتھلیٹک کلب اور کیوکیواسپورٹس کلب شامل ہیں جبکہ ٹاکاسنگھا کرکٹ کلب اور اولڈ میوچل ہیلتھ اسٹریک اکیڈمی کو پریکٹس کیلئے استعمال کیا جائے گا ۔ان کاموں میں میدان میں نء گھاس لگانا ،عارضی ڈھانچے کی تعمیر اور مرمت اور کمروں اور میڈیا سینٹرز کو تیار کرنا ہے ۔انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی ٹیم کا دورہ زمبابوے آج کل میں ہی متوقع ہے ۔دورے کا مقصد انتظامات کا جائزہ لینا ہے ۔واضح رہے کہ لوگان کپ کے دو میچز اور دسمبر 10 سے 18 تک ہونیوالے میچز منسوخ کر دیئے گئے ہیں ۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی