پنجاب پٹوارخانوں میں ریٹائرڈ تحصیلدار ، پٹواریوں کی بطور منشی کام کرنے پر پابندی

پنجاب پٹوارخانوں میں ریٹائرڈ تحصیلدار ، پٹواریوں کی بطور منشی کام کرنے پر ...

 لاہور(عامر بٹ سے )لاہورہائیکورٹ کی واضح ہدایات کے بعد بورڈ آف ریونیو پنجاب نے صوبے بھر میں قائم پٹوار خانوں میں ریٹائرڈ تحصیلدار نائب تحصیلدار اورپٹواریوں کی بطور منشی کام کرنے پر پابندی عائد کردی ہے۔ پابندی کے فیصلے کے بعد پٹواریوں سے تحریری گارنٹی مانگ لی گئی ہے۔ پٹواریوں کے لئے کرپشن مک مکا سائل سے ڈیلنگ اور بدعنوانی کی صورت میں مڈل مین کاکردر ختم ہو جائیگا۔پنجاب میں تمام پٹوار خانوں میں کام کرنے والے پرائیویٹ منشیوں کے علاوہ بذات خود پٹواری بھی پریشان ہوگئے ہیں۔ بورڈ آف ریونیو پنجاب نے صوبے بھر میں قائم پٹوار خانوں میں پرائیویٹ افراد، ریٹائرڈ، تحصیلدار، ریٹائرڈ ریونیو آفیسر اور ریٹائرڈ پٹواریوں کی بطور منشی کام کرنے پر فی الفور پابندی عائد کی ہے۔ ڈپٹی کمشنر لاہور آفس سے جاری ہونے والے لیٹر نمبر8300مورخہ12دسمبر2017میں تمام سٹیلمنٹ افسر لاہور تمام اسسٹنٹ کمشنرز ای ایس او لاہور، تمام تحصیلدار وں اور نائب تحصیلدار وں کو حکم جاری کیا ہے کہ وہ اپنی قانونگویوں اور زیر انتظام علاقوں میں قائم پٹوارخانوں پر فوری طور پر پرائیویٹ افراد کے بطور منشی کام کرنے پر پابندی عائد کریں کیونکہ اس سے ایک طرف تو سرکاری ریکارڈ غیر محفوظ ہے اور دوسرا عوامکے سامنے بھی شرمندگی ہوتی ہے اگر کسی بھی پٹوارخانہ میں کسی پرائیویٹ فرد کو بطور منشی کام کرتا پایا گیا تو متعلقہ ذمہ داران کے خلاف پیدا ایکٹ2008 کے تحت کارروائی کی جائیگی۔ بورڈ آف ریونیو کی جانب سے پابندی کے بعد لاہور کے علاوہ پنجاب کے تمام پٹوار خانوں میں پریشانی کی لہر دوڑ گئی ہے کیونکہ پٹواری کیلئے کرپشن کی راہ ہموارکرنے، سائلین سے ڈیلنگ کرنے والا مڈل مین کا راستہ اب بند ہوگیا ہے۔ اس پابندی سے ایک طرف پرائیویٹ افراد اورمنشی شدید پریشان ہیں تو دوسری طرف بذات خود پٹواری بھی پریشانی کا شکار ہیں۔

پٹوار خانے

مزید : صفحہ اول