برطانیہ، امریکہ اور کینیڈا میں شدید سردی سے نظام زندگی مفلوج

برطانیہ، امریکہ اور کینیڈا میں شدید سردی سے نظام زندگی مفلوج

لندن /واشنگٹن /اوٹاوا(آئی این پی)برطانیہ، امریکہ اور کینیڈا میں سخت سردی کے باعث نظام زندگی مفلوج ہوکررہ گیا ہے برطانیہ میں درجہ حرارت منفی 13 ہونے سے زندگی کی سرگرمیاں منجمد ہوگئیں، امریکہ میں برفانی طوفان سے ہزاروں افراد متاثر ہوئے ہیں ۔ کینیڈا میں کڑاکے کی سردی کے باعث سڑکیں، ٹرینیں اور فضائی سفر متاثر ہوا ہے۔ لندن، مڈلینڈ، شمالی آئر لینڈ، ویلز اور دیگر علاقوں میں درجہ حرارت منفی 13 ہونے سے سڑکوں اور ٹرینوں کی پٹری پر برف جم گئی ۔ شدید سردی اور برف باری کے بعد حکام نے متعدد ٹرینیں اور پروازیں معطل کردیں ، سڑک کے ذریعہ سفر کرنے والوں کو انتباہ کیا گیا ہے کہ وہ اس موسم میں سفر کرکے جان کا خطرہ مول نہ لیں۔برف باری کے باعث یورو ٹنل کی بجلی منقطع ہوگئی جس سے ٹرینوں اور بسوں کی روانگی میں 6 گھنٹے کی تاخیر ہوگئی۔ امریکہ میں برفانی طوفان نے زندگی مفلوج کردی ہے۔ ریاست نیو یارک، بوسٹن، نیو ہیمشائر، البانے اور دیگر ریاستوں میں برف باری کے باعث کڑاکے کی سردی ہے۔حکام نے اسکول بند کردئے ہیں اور عوام کو مشورہ دیا ہے کہ گھروں میں رہیں۔ کئی علاقوں میں بجلی معطل ہوگئی ۔ ہزاروں افراد سردی سے متاثر ہوئے ہیں۔ بجلی فراہم کرنے والی کمپنیاں بجلی بحالی کے کام میں مصروف ہیں۔کینیڈا میں سخت سردی کے باعث سڑکوں پر برف جم گئی ۔ خراب موسم کے باعث متعدد پروازیں معطل ہونے سے ہزاروں مسافر ائیر پورٹس پر محصور ہوگئے ۔

مزید : صفحہ آخر