پشاور ہائیکورٹ کا احسان اللہ احسان کو رہا نہ کرنے کا حکم

پشاور ہائیکورٹ کا احسان اللہ احسان کو رہا نہ کرنے کا حکم

پشاور(صباح نیوز)پشاور ہائی کورٹ نے کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان کو رہائی نہ دینے کا حکم دیتے ہوئے ملزم کا کیس نمٹا دیا۔بدھ کوپشاور کے ہائی کورٹ میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان کی رہائی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ کیس کی سماعت پشاور ہائی کورٹ کے دو رکنی بینچ نے کی۔چیف جسٹس یحیٰ آفریدی اور جسٹس اعجاز انور پر مشتمل دو رکنی بینچ نے آنے ہونے والی سماعت میں فیصلہ دیتے ہوئے کیس نمٹا دیا۔ مقدمے کی سماعت کے دوران حکومت کی طرف سے ایڈووکیٹ جنرل عدالت میں پیش ہوئے۔عدالت نے دلائل سننے کے بعد حکومت کو کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان کو معافی یا رہائی دینے سے روک دیا۔ اس موقع پر درخواست گزار نے اپنے خدشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں خطرہ ہے کہ سانحہ اے پی ایس کے شہدا کے ذمہ دار کو معافی دیدی جائے گی۔ جس پر ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت میں جواب دیتے ہوئے کہا کہ ایسی کوئی بات نہیں ،ادارے ملزم سے تفتیش کر رہے ہیں۔بعد ازاں عدالت نے دونوں جانب سے دلائل اور موقف دننے کے بعد حکومت کو احسان اللہ احسان کو رہائی نہ دینے کا حکم دیتے ہوئے کیس نمٹا دیا۔

مزید : صفحہ آخر