ای او بی آئی پنشن میں اضافہ، اچھا فیصلہ

ای او بی آئی پنشن میں اضافہ، اچھا فیصلہ

  

وزیراعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری نے بزرگ حضرات کی پنشن میں دو ہزار روپے ماہانہ کے اضافے کا اعلان کر دیا، جو کابینہ سے منظوری کے بعد یکم جنوری سے ملنا شروع ہو جائے گی اور ان بزرگوں کو ساڑھے چھ ہزار روپے کی بجائے ساڑھے آٹھ ہزار روپے فروری میں ملیں گے۔ زلفی بخاری نے مزید یہ بھی کہا کہ وہ کوشش جاری رکھیں گے اور یہ پنشن کم از کم پندرہ ہزار روپے تک کر دی جائے گی۔ای او بی آئی کے پنشنروں کی پنشن میں یہ اضافہ ان کے وعدے کے مطابق ہے جو گزشتہ برس ہی کیا گیا تھا اس سلسلے میں ان پنشنر حضرات کی طرف سے بار بار بتایا جاتا رہا کہ مہنگائی منہ پھاڑے کھڑی اور آمدنی نگلے جاتی ہے اور یہ پنشن بہت معمولی ہے، ابتدا میں یہ ایک ہزار تھی، اس میں ساڑھے چھ ہزار تک کا اضافہ دونوں سابقہ حکومتوں نے کیا۔ پیپلزپارٹی نے زیادہ بڑھائی جبکہ مسلم لیگ (ن) کے وزیر خزانہ اسحاق ڈار بات ہی نہیں سنتے تھے۔ انہوں نے صرف ایک ہزار روپے بڑھائے تھے۔ یہ پنشن ان بزرگوں کے سابقہ اداروں کی کنٹری بیوشن سے ملتی ہے جو باقاعدہ رجسٹرڈ ہیں۔ پنشنر حضرات نے اس اضافے پر خوشی کا اظہار کیا تاہم اب بھی ان کو اطمینان نہیں وہ چاہتے ہیں کہ کم از کم پندرہ ہزار روپے والا وعدہ پورا کیا جائے اور اسے مزید بڑھایا جائے۔یوں بھی ای او بی آئی کے محکمے میں بدعنوانی ہوئی۔ نیب نے گرفتاریاں بھی کیں، اب یہ کیس کہیں دفن ہے، اسے دوبارہ کھول کر تفتیش کے ذریعے ملزموں سے رقم نکلوا کر ان کو سزا بھی دینا چاہیے۔

مزید :

رائے -اداریہ -