میڈیا ریاست کااہم ستون، حکومت اس سے اپنے تعلقات بہتر بنانا چاہتی ہے: فیاض الحسن چوہان

میڈیا ریاست کااہم ستون، حکومت اس سے اپنے تعلقات بہتر بنانا چاہتی ہے: فیاض ...

  

لاہور(سٹاف رپورٹر سے) صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ انہوں نے جان ہتھیلی پر رکھ کر وکلا کے معاملے کو حل کیا۔ ان پر حملے کے دوران اینٹیں بھی برسائی گئیں اور فائرنگ بھی ہوئی۔ اگر وہ حکمت عملی سے کام نہ لیتے تو بہت زیادہ جانی نقصان ہو سکتا تھا۔ لاہور ایڈیٹرز کلب کی تقریب میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آنے والے دنوں میں میڈیا سے حالات مزید بہتر بنائے جائیں گے، میڈیا ریاست کا اہم ستون ہے حکومت اس سے اپنے تعلقات بہتر بنانا چاہتی ہے کیونکہ اگر یہ ستون گر گیا تو پوری عمارت گر سکتی ہے۔ تاہم حکومت آئین اور اداروں پر بلا جواز تنقید کی اجازت نہیں دیتی۔ اس کا سختی سے محاسبہ کیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ میڈیا کے حوالے سے پسند نہ پسند کی کوئی بات نہیں۔ وہ تمام صحافیوں کی دل سے عزت کرتے ہیں۔ فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا کہ جتنی قانون سازی پنجاب میں پچھلے سوا سال میں ہوئی اس کی ماضی میں مثال نہیں ملتی۔ سوا سال میں مفاد عامہ کے حوالے سے 37قوانین بنے اور اسمبلی سے پاس کرائے گئے۔ اس بار حقیقتاً35فیصد ترقیاتی اخراجات جنوبی پنجاب کے لئے رکھے گئے جو اس خطے پر استعمال ہوئے، اس بار پنجاب میں تاریخی ٹیکس کولیکشن ہوئی جو 104فیصد تک گئی۔ اس سال کی پہلی سہ ماہی میں اخراجات میں 75ارب روپے کی بچت کی گئی۔ صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ وزیر اعلیٰ بزدار خاموشی سے کام کرنے کے عادی ہیں وہ شور شرابا پسند نہیں کرتے ورنہ وہ شہباز شریف سے زیادہ بہتر وزیر اعلیٰ اور منتظم ہیں، ان کی خصوصی ہدایت پر ڈاکٹرز، پیرا میڈیکل سٹاف اور ہسپتالوں کے تحفظ کے لئے بل پر کام مکمل ہو گیا ہے او ر اگلے ماہ اسے منظوری کے لئے اسمبلی میں پیش کر دیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ حکومت نے پی آئی سی حملے کا معاملہ درست انداز میں نہیں دیکھا۔ وہ خود وزیر اعلیٰ کی ہدایت پر جائے وقوعہ پر پہنچے اور حکومت کی رٹ قائم کی، انہوں نے کہا کہ معاشرے میں بڑھتے ہوئے تشدد کے رجحان کو ختم کرنا ہو گا اور اس سلسلہ میں تمام سٹیک ہولڈر کو اپنا کردار ادا کرنا ہو گا۔ قانون سب کے لئے ہے اس پر عمل ہونا چاہئے لیکن بدقسمتی سے صبح وکلا قانون توڑتے ہیں شام کو ججز ان کی ضمانت لے لیتے ہیں تاہم پی آئی سی حملے میں ملوث تمام ملزموں کو قانون کے مطابق سزا ملے گی۔

فیاض الحسن چوہان

مزید :

صفحہ اول -