بارش کے بعد دھند‘ مختلف شہروں میں حادثے‘بجلی کا ترسیلی نظام متاثر

  بارش کے بعد دھند‘ مختلف شہروں میں حادثے‘بجلی کا ترسیلی نظام متاثر

  

ملتان‘ وہاڑی‘ کوٹ ادو‘ بنگلہ منٹھار‘ وہوا (سٹاف رپورٹر‘ نمائندہ خصوصی‘ بیورو رپورٹ‘ تحصیل رپورٹر‘ نمائندہ خصوصی) ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں شدید دھند سے بجلی کا ترسیلی و تقسیم نظام متاثر ہونا شروع ہوگیا ہے۔ بریک ڈاؤن اور ٹرپنگ سے سپلائی معطل اور متاثر ہونا شروع ہوگئی ہے۔ جمعہ کے(بقیہ نمبر37صفحہ12پر)

روز سسٹم پر باربار ٹرپنگ سے بجلی کی بلا تعطل فراہمی میں خلل آتا رہا۔ ملتان سے میٹر و بس سروس روٹ پر بجلی کی انڈر گرؤنڈ سپلائی بھی بارش کے بعد مکمل طور پر بحال نہیں ہو سکی ہے۔ جمعرات کے روز زیر زمین، انڈر گراؤنڈ فیڈرز میں پانی چلے جانے کی وجہ سے فیڈرز کئی گھنٹے تک بند رہے تھے۔ جمعہ کے روز علی الصبح شدید دھند اور بادلوں کی وجہ سے ٹرانسمیشن لائنوں پر اوس گرنے سے بریک ڈاؤن آتے رہے۔ ملتان شہر میں ٹرپنگ جاری رہی جس سے صارفین متاثر ہوئے۔ ملک بھرمیں جاری بارش اورخراب موسم کی وجہ سے مسافرٹرینوں کاشیڈول بھی متاثرہواہے گزشتہ روزتاخیرسے آنے والی مسافرریل گاڑیوں میں لاہورسے کراچی جانے والی شاہ حسین6گھنٹے40منٹ،کراچی سے لاہورجانیوالی شاہ حسین4گھنٹے30،کراچی سے روالپنڈی جانے والی تیزگام7گھنٹے55منٹ،کوئٹہ سے پشاورجانے والی جعفر3گھنٹے،کراچی سے پشاورجانے والی عوام2گھنٹے20منٹ،لاہورسے کراچی جانے والی شالیمار1گھنٹہ35منٹ کی تاخیرسے ملتان پہنچیں مسافرریل گاڑیوں کی تاخیرکے باعث مسافروں اوران کے عزیزاقارب کوشدیدپریشانی کاسامناکرناپڑا۔ جمعرات کے روزدن بھررہنے والی ہلکی بارش کی وجہ سے خراب ہوناوالاجدید سگنل سسٹم گزشتہ روزدن بھررہنے والی دھند کی وجہ سے ٹھیک نہ ہوسکاہے۔ریلوے ذرائع کے مطابق بارش کے باعث جدیدسگنل سسٹم(سی بی آئی)سسٹم میں نمی آگئی تھی جس کی وجہ سے لودھراں اورچیچہ وطنی کے درمیان بلاک سیکشن اوراسٹیشنوں کے یارڈ میں مسافرٹرینوں کے لئے موجودتمام سگنل ریڈہوگئے تھے جس پرمسافرٹرینوں کوپیپرلائن کلیئر(پی ایل سی)کے تحت چلایاجارہاہے۔تاہم گزشتہ روزبارش تونہ ہوئی تاہم موسم بھی صاف نہ ہوسکاجس کی وجہ سے سسٹم میں موجودنمی ختم نہ ہوسکی اورسسٹم بدستورپیپرلائن کلئیرکے تحت ہی چل رہاہے۔جس کی وجہ سے مسافرریل گاڑیوں کوتاخیرکاسامناہے۔ بارش کی وجہ سے سڑکوں پر کیچڑ بن گیا جس وجہ سے شہر کے متعدد مقامات وی چوک،کلب روڈ،بوریوالا روڈ نزد سبز منڈی،ملتان روڈسمیت متعدد مقامات میں موٹر سائیکل پھسلنے کے واقعات پیش آئے جن میں 6شہری گر کر زخمی بھی ہوگئے ریسیکو 1122 نے بروقت پہنچ کر زخمیوں کو فسٹ ایڈ دی طبی امداد دی ہے۔ کوٹ ادو وگردونواح میں گزشتہ2 روز سے شروع ہونے والی بارش کا سلسلہ تا حال وقفے وقفے سے جاری ہے جسکی وجہ سے سردی کی شدت میں اضافہ ہو گیا ہے،بارش سے بجلی وٹیلی فون کا نظام بھی کئی علاقوں میں معطل ہوگیا جبکہ گلیوں اور سڑکات پر پانی بھر جانے سے بارش کا پانی لوگوں کے گھروں اور دوکانوں میں داخل ہو گیا جسکی وجہ سے لوگوں کو آنے جانے میں شدید دشواری کا سامنا رہا،بارش کا سلسلہ تاحال وقفے وقفے سے جاری ہے۔ منٹھار اور اس کے گردونواح میں ہلکی بارش اور سرد ٹھنڈی ہوا نے سردی میں اضافہ کردیا شہر اور قریبی علاقوں میں بارش اور ٹھنڈی ہوا چلنے سے سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا ٹھنڈے موسم نے شہریوں کو گھروں تک محدود کردیا،سانس، نزلہ زکام اور الرجی کے مریضوں میں اضافہ ہو ا ہے، انڈے،سوپ،کافی، مچھلی،ڈرائی فروٹ،کی مانگ میں بھی اضافہ دیکھا جا سکتا ہے، سردی میں غیر متوقع اضافے سے گرم کپڑوں کی مانگ بھی بڑھ گئی ہے۔ وہوااور نواحی قصبات مٹھوان، باجھہ، کوتانی، مسلم آباد، قدرت آباد، لتڑا، روڈہ ٹبہ، جھوک بودو سمیت دیگر درجنوں بستیوں میں سردی کی شدت میں اضافہ کے سبب ایندھن کے لیے لکڑی کی مانگ میں اضافہ ہوگیا ہے مگر علاقہ بھر میں کہیں بھی لکڑی دستیاب نہیں ہے کیونکہ ملک کے دیگر شہروں جن میں ڈیرہ غازی خان، ڈیرہ اسماعیل خان، ملتان، مظفر گڑھ سمیت دیگر درجنوں شہروں میں گیس کا پریشر کم ہوجانے کے باعث لکڑیوں کے مقامی تاجر لکڑی کو مقامی مارکیٹ میں فروخت کرنے کی بجائے مہنگے داموں بیچنے کے لیے بڑے شہروں میں فروخت کرنے کو ترجیح دے رہے ہیں جس کے باعث یہاں سے لکڑی ٹرالیوں پر لاد کر دوسرے شہروں کو منتقل کی جارہی ہے جس سے علاقہ بھر میں لکڑی کا بحران پیداہوگیا ہے لکڑی کی عدم دستیابی کے باعث یہاں لکڑی کی قیمتیں بھی آسمان سے باتیں کررہی ہیں اور شہری مہنگے داموں لکڑی خریدنے پر مجبور نظر آتے ہیں شہریوں محمدرمضان، عنایت اللہ، اللہ نواز، محمدبخش، حافظ محمدانور، شکوراحمد، محمدضیاء، سجاد احمد نے علاقہ بھر میں لکڑی کی نایابی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ علاقہ میں گیس فراہم کرکے لکڑی کے بطور ایندھن استعمال سے نجات دلائی جائے۔

بارش

مزید :

ملتان صفحہ آخر -