ڈاکٹر کیخلاف اندراج مقدمہ کی سماعت ایف آئی اے سے 21دسمبر کو جواب طلب

  ڈاکٹر کیخلاف اندراج مقدمہ کی سماعت ایف آئی اے سے 21دسمبر کو جواب طلب

  

ملتان (وقائع نگار)ایڈیشنل سیشن جج ملتان نے لاہور کارڈیالوجی ہسپتال کے ڈاکٹر کی جانب سے وکلاء برادری کے خلاف عوام میں نفرت پھیلانے سے متعلق اندراج مقدمہ کی درخواست (بقیہ نمبر18صفحہ12پر)

پر ابتدائی سماعت کرتے ہوئے ڈپٹی ڈائریکٹر سائبر کرائم ایف آئی اے سے 21 دسمبر کو جواب طلب کر لیا ہے۔ قبل ازیں فاضل عدالت میں محمد بلال بٹ ایڈووکیٹ سپریم کورٹ نے ایڈووکیٹ سپریم کورٹ سید ریاض الحسن گیلانی کے توسط سے درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ لاہور کارڈیالوجی ہسپتال میں تعینات ڈاکٹر عرفان اسلم کی جانب سے وکلا کے خلاف ویڈیو بیان بازی وائرل کرنے، وکلاء کو اشتعال دلوانے اور وکلاء برادری کے خلاف عوام میں نفرت پھیلائی گئی ہے۔ وائرل کردہ ویڈیو کی وجہ سے پورے ملک میں نفرت امیز مواد پھیل رہا ہے۔ جس پر انہوں نے ڈپٹی ڈائریکٹر سائبر کرائم ایف آئی اے کو ڈاکٹر کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست دی لیکن اس قابل دست اندازی جرم کے خلاف اچھی تک مقدمہ درج نہیں ہوا ہے اس لیے عدالت سے استدعا ہے کہ ملزم ڈاکٹر کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا جائے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -