افغانستان: طالبان کے حملے میں سیکیورٹی فورسز کے 23 اہلکار ہلاک

افغانستان: طالبان کے حملے میں سیکیورٹی فورسز کے 23 اہلکار ہلاک
افغانستان: طالبان کے حملے میں سیکیورٹی فورسز کے 23 اہلکار ہلاک

  



کابل(ڈیلی پاکستان آن لائن)افغانستان کے وسطی صوبے غزنی میں افغان طالبان نے سیکیورٹی فورسز کے اندر موجود اپنے جنگجوؤں کی مدد سے23 اہلکاروں کو ہلاک کر  دیا۔

غیرملکی میڈیا کےمطابق افغان صوبے غزنی کے ضلع قراباغ میں طالبان کے حملے میں 23 اہلکار ہلاک ہوئے ہیں جو افغان فورسز کے اندر بڑھتے ہوئے خطرے کی جانب اشارہ ہے۔افغان وزارت دفاع کی جانب سےٹویٹرپرجاری بیان میں کہاگیاتھاکہ غزنی کےضلع قراباغ میں طالبان  دہشت گردوں نے افغان نیشنل آرمی کے اہلکاروں کو قتل کردیا۔وزارت دفاع کے ترجمان فواد امان کا کہنا تھا کہ فوجیوں کو طالبان کے دراندازوں نے نشانہ بنایا۔انہوں نے غزنی کے صوبائی کونسل کے ایک رکن کی جانب سے 23 اہلکاروں کی ہلاکت کی خبر کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ حملے 9 اہلکار قتل ہوئے ہیں۔

دوسری جانب طالبان نےاپنےایک بیان میں دعوی کیاہےکہ اُنہوں نے قراباغ میں دشمن کےایک مرکزکونشانہ بنایااوردرجنوں سیکیورٹی اہلکاروں کوہلاک کر دیا۔افغان طالبان کی جانب سےسیکیورٹی فورسز پر حملوں کا سلسلہ جاری ہے جبکہ دوسری جانب امریکا کے ساتھ امن عمل کو حتمی شکل دینے کے لیے مذاکرات بھی جاری ہیں۔اس حملے کےبعدافغان حکومت اوران کی اتحادی فورسز کوطالبان کی جانب سےمزیدخطرناک حملوں کےخدشات میں اِضافے کاخدشہ ظاہرکیاجارہاہے۔طالبان نے 11دسمبر کوضلع بگرام میں امریکا کی مرکزی ملٹری بیس کے خودکش حملہ کیا تھا جس کے نتیجے میں خاتون سمیت 2 افراد ہلاک اور 70 سے زائد زخمی ہوگئے تھے ۔یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے امریکا نے کہا تھا کہ طالبان کے ساتھ قطر میں مذاکرات دوبارہ شروع ہوں گے اور افغان امن عمل کے حوالے سے حتمی معاہدہ طے کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

مزید : بین الاقوامی