احتجاجاً کتے اور گدھی کی شادی کروادی گئی، کس چیز کے احتجاج میں یہ کام کیا گیا؟ آپ سوچ بھی نہیں سکتے کہ ایسا بھی ممکن ہے

نئی دلی(نیوز ڈیسک)ویلنٹائن ڈے کے موقع پر بھارت میں جہاں ایک جانب نوجوان جوڑوں کی بڑی تعداد عوامی مقامات پر تفریح کرتی نظر آئی تو وہیں ان کا تعاقب کرنے والے شدت پسند بھی پوری طرح متحرک رہے۔ شدت پسند تنظیم بجرنگ دل کے کارکن گروہوں کی شکل میں مختلف مقامات پر پھرتے رہے اور نوجوان جوڑوں کو گھیر کر ہراساں کرتے دیکھے گئے۔
ٹائمز آف انڈیا کے مطابق بجرنگ دل کے شدت پسندوں نے احمد آباد، حیدر آباد اور چنائی سمیت کئی بڑے شہروں میں ویلنٹائن ڈے کے خلاف احتجاج بھی کیا، لیکن چنائی میں اس احتجاج کے لئے انتہائی حیران کن طریقہ اختیار کیا گیا۔ احتجاج کرنے والے شدت پسندوں کی ایک بڑی تعداد نے جلوس نکالا جس کے آگے آگے ایک کتے اور گدھی کو چلایا جا رہا تھا۔ ان جانوروں کی احتجاج میں شمولیت کا مقصد اس وقت سامنے آیا جب جلوس کے اختتام پر اس کتے اور گدھی کی شادی کروا دی گئی۔ شدت پسندوں کا کہنا تھا کہ وہ اس شادی کی صورت میں ان لڑکوں اور لڑکیوں کو پیغام دینا چاہتے ہیں جو ویلنٹائن ڈے پر مادر پدر آزاد ہو کر سرعام اظہار محبت کرتے پھرتے ہیں۔ ان کی جانب سے ویلنٹائن منانے والوں کی دھمکیاں بھی دی گئیں۔ کشیدہ صورتحال کے پیش نظر لکھنﺅ یونیورسٹی نے 14 فروری کے دن کو چھٹی قرار دیتے ہوئے طلبا و طالبات کو یونیورسٹی آنے سے منع کردیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...