مردان کی ترقی کیلئے صوبائی حکومت سے 50ارب روپے گرانٹ کی فراہمی کا مطالبہ

مردان کی ترقی کیلئے صوبائی حکومت سے 50ارب روپے گرانٹ کی فراہمی کا مطالبہ

مردان (بیورورپورٹ) ضلع مردان کے نائب ناظم اسدعلی کشمیری نے مردان کی ترقی کے لئے صوبائی حکومت سے 50ارب روپے گرانٹ کی فراہمی کامطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ مثبت اصلاحات لانے سے بلدیاتی نظام مضبوط ہوگا ، بلدیاتی ایکٹ اور رولز آف بزنس تضاد آدھا تیتر آدھابٹیروالامعاملہ ہے ،جنرل مشرف کا بلدیاتی نظام ہر لحاظ سے بہترتھا کونسل میں ہر رکن کو اظہار خیال کی مکمل آزادی ہے ،ہاؤس کو غیر جانبداری سے چلانے کی روایت ڈال دی گئی ہے وہ اپنے دفتر میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کررہے تھے اسد علی کشمیری نے کہاکہ مردان میں بڑے بڑے پراجیکٹ پرکام سستی کا شکارہے جس کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات کاسامناہے انہوں نے کہاکہ باچاخان میڈیکل کالج ،بے نظیر چلڈرن ہسپتال اور ڈی ایچ کیو کے منصوبے مکمل ہوجانے سے صحت کے مسائل حل ہوجائیں گے لیکن فنڈز جس ریشو سے ریلز کئے جارہے ہیں اس سے یہ منصوبے طوالت کے شکارہوگئے ہیں جس سے شہریوں میں مایوسی پائی جاتی ہے اسد علی کشمیری نے کہاکہ مردان صوبے کا دوسرابڑاشہر ہے اوراس کے مسائل اتنے گھمبیر ہیں کہ ضلعی حکومت کی بس کی بات نہیں صوبائی حکومت کو چاہئے کہ وہ شہر کے میگا پراجیکٹ کے لئے پچاس ارب روپے کا پیکج دیں انہوں نے قائم مقام ناظم کے انتخاب میں مداخلت اور جوڑتوڑ کے الزامات کو رد کرتے ہوئے کہاکہ انہوں نے کسی قسم کی جانبداری نہیں کی ہے بلکہ ہاؤس میں اے این پی کے تین ارکان نے اپنی صفیں تبدیل کیں تو پی پی سمیت دیگر ارکان کو بھی شہہ ملی انہوں نے کہاکہ ناظم کا انتخاب اس لحاظ سے بھی ضروری تھاکہ ضلع بھر کے تمام کے تمام منصوبے اورکام ٹھپ ہوکر رہ گئے تھے انہوں نے کہاکہ ضلع کونسل نے چالیس کروڑ روپے کا بجٹ منظوری کے لئے وزیراعلیٰ کو ارسال کیاہے جس سے اے ڈی پی میں شامل تمام سکیموں کو عملہ جامہ پہنایاجائے گا انہوں نے لشمینا کے حوالے سے بتایاکہ اس وبا کی روک تھام کے لئے محکمہ صحت کو ضروری اقدامات کی ہدایات پہلے ہی جاری کئے جاچکے ہیں اور محکمہ فنانس کو فوری طور پر ادویات کی خرایدی کے لئے فنڈز ریلز کرنے کے احکامات دیئے گئے ہیں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...