نواز زرداری کو سی پیک کی سزا دی جارہی ہے ،ملک بچانے کیلئے حکمرانوں کو بھگانا ہوگا ،فضل الرحمن

نواز زرداری کو سی پیک کی سزا دی جارہی ہے ،ملک بچانے کیلئے حکمرانوں کو بھگانا ...

ڈیرہ غازیخان(نمائندہ خصوصی، سٹی رپورٹر )جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ حکومت کا آئی ایم ایف کے پاس (بقیہ نمبر46صفحہ12پر )

جانا اس بات کو تقویت دینا ہے کہ تبدیلی سرکار ناکام ہوچکی ہے۔آئی ایم ایف امریکہ کے زیر اثر ہے اور در اصل چائنا کو پاکستان سے سرمایہ کاری سے روکنے اور اسے مایوس کرنے کی گیم ہے،چائنا کے بارے میں ہم یہ بڑے فخر سے کہتے تھے کہ چائنا کے ساتھ ہماری دوستی سمندر سے گہری، ہمالیہ سے بلند و بالاہے اور شہد سے میٹھی ہے آج کیا ہو گیا ہے کہ چائنا ہم سے مایوس ہے ڈیرہ غازیخان میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان خیالات کا اظہا رکر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ یہ کوئی ایک دو سال یا حکومت کی کرسی پر بیٹھے ہوئے شخص کی بات نہیں اس میں بہت سے ادارے شامل ہیں یہ ایک لمبی گیم ہے چائنا کو ہم سے دور کرنے کی گہری سازش ہے آئی ایم ایف جیسے مالیاتی ادارے پہلے معاشی طور پر مفلوج کرتے ہیں پھر سخت شرائط پر قرضہ جاری کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے جس طرح چائنا کے کریڈٹ کو نقصان پہنچایا اور ان کے اعتماد کو ٹھیس پہنچائی انہیں زچ کیا اس کے بعد کوئی قوم ہم پر اعتبار نہیں کرے گی اور سرمایہ کاری کے لئے تیا رنہیں ہو گی۔جب ہماری چائنا کے ساتھ دوستی معاشی دوستی میں بدل رہی تھی تو ہم نے ترجیحات بدل لیں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ زرداری اور شہباز کو سی پیک کی سزا دی جارہی ہے،موجودہ حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے معیشت سمیت تمام شعبے ہچکی لے رہے ہیں،موجودہ حکمرانوں کو بھگانا ہوگا ملک کوبچانا ہوگا۔ اپوزیشن لیڈر میاں محمد شہباز شریف پی اے سی کے چیئرمین نہیں ہوئے تو حکومت اور اسمبلی بھی نہیں چل سکتے۔ وہ یہاں پارٹی کے دیرینہ ساتھی حاجی محمد رمضان بھٹی کی وفات پر مرحوم کے بیٹوں سے تعزیت اور اظہار افسوس کیلئے ان کی رہائش گاہ پرآئے ہوئے تھے اس موقع پر انہوں نے کہا کہ حکومت نے آئی ایم ایف کی سخت شرائط کو تسلیم کیا ہے جس سے عوام کو مزید مہنگاہی کا سامنا کرنا پڑے گا یہ انگوٹھا حکومت ہے اور حکمران اشاروں پر چلنے والے ہیں یہ گریٹ گیم کا حصہ ہے۔ موجودہ حالات اس سطح پر پہنچ گئے ہیں کہ اس حکومت کو اب مزید برداشت نہیں کیا جا سکتا۔ موجودہ حکومت جعلی مینڈیٹ کا حصہ ہے یہ خلاء میں کھڑی ایک خلائی حکومت ہے ان کے پاس نہ کوئی ویژن ہے نہ کوئی پروگرام سوائے اس کے کہ یہ انگوٹھا لگانے والے ہیں جب تک دنیا کوان کے انگوٹھا کی ضرورت ہے یہ حکومت کھڑی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری جماعت اس حکومت کے خلاف ملین مارچ جاری رکھے ہوئے ہے اور17 فروری کو یہ مارچ ملتان پہنچے گا جہاں عظیم الشان جلسہ ہوگا،اسلام آباد میں پہنچ کر حکومت کا خاتمہ کریں گے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ فوری طور پر نئے الیکشن کرا کر قوم سے دوبارہ مینڈیٹ لیا جائے۔قبل ازیں انہوں نے حاجی محمد رمضان بھٹی مرحوم کی روح کے ایثال ثواب کے لئے دعاء اور فاتحہ خوانی کی اور مرحوم کے بڑے بیٹے ذوالفقار علی بھٹی کی دستاربندی کی اس موقع پر مرحوم محمد رمضان بھٹی کے لئے اپنے جذبات اور خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم ان کے دیرینہ ساتھی اور اہم پارٹی رہنما تھے پارٹی کے ٹکٹ پر متعدد بار الیکشن میں حصہ لیا ان کے انتقال پر انکے سمیت تمام احباب اور پارٹی افسردہ ہے اس موقع پر مرحوم کے بیٹوں ذوالفقار علی بھٹی، افتخار بھٹی اور محمد زبیر بھٹی کے علاوہ پارٹی کے رہنمامولانا جمال عبدالناصر اور ورکرز کی بڑی تعدادموجود تھی۔.

مولانا فضل الرحمن

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...