کپل شرما کی پاکستان میں بھی مقبولیت بہت زیادہ ہے،خالد اعظمی

کپل شرما کی پاکستان میں بھی مقبولیت بہت زیادہ ہے،خالد اعظمی

کراچی(اسٹاف رپورٹر) بھارت کے مقبول مزاحیہ ٹی وی پروگرام دی کپل شرما شو کے اسکرپٹ رائیٹر خالد اعظمی نے کہا ہے کہ کپل شرما کی دنیا بھر کی طرح پاکستان میں مقبولیت بہت زیادہ ہے،کپل شرما نے پاکستان آنے کے لئے تین مرتبہ کوشش کی تاہم ویزہ پالیسی میں پیچیدگیوں کے باعث وہ پاکستان نہیں آسکے، مذاح میں ہم پاکستان سے بہت پیچھے ہیں ،میں اس بات کو دل سے تسلیم کرتاہوں کہ ہمارے ہاں عمر شریف کی کامیڈی کی نقل کرکے پورے پورے شوز ترتیب دئے جاتے ہیں ،عوامی سطح پر دونوں ملکوں کے مابین کوئی فاصلے نہیں ہیں کلچر اور ا?رٹ ہی واحد زریعہ ہے جو دونوں ملکوں کے تعلقات کوبہتر بناسکتا ہے،ان خیالات کا اظہارا نہوں نے گذشتہ روز کراچی پریس کلب میں میڈیا کے نمائندوں کے ساتھ بات چیت کے موقع پر کیا،خالد اعظمی نے بتایا ہے کہ وہ پاکستان کے لئے 4 فلمیں لکھ رہے ہیں جو اپنے آخری مراحل میں داخل ہوچکی ہے،جبکہ ان اسکرپٹ پر بننے والی فلموں میں پاکستان اور بھارت کے فنکار اور ٹیکنیشنزکام کریں گے،انہوں نے کہا کہ کوئی نہیں چاہتا ہے کہ پاکستانی فنکار بھارت میں کام نہیں کرے صرف ایک چھوٹا سے گروہ ہے جس نے پاکستانی فنکاروں کی بھارت میں کام پر پابندی لگائی ہے اور مجھے لگتا ہے یہ پابندی بھی جلد ہی ختم ہوجائے گی کیوں کہ بھارت میں پاکستانی فنکاربہت زیادہ مقبول ہیں ،فواد خانکی مقبولیت جس تیزی سے ہندوستان میں بڑھ رہی تھی اگر دو سال مزید وہ بھارت میں کام کرتے تو بولی ووڈ کی تین خان سلمان خان ،شارخ خان اور عامر خان کے ساتھ چوتھا خان فواد خان ہوتا۔جاوید شیخ اس عمر میں بھی ہندوستان میں مقبول ہیں،ماہرہ خان ،عمران عباس،عمائمہ ملک،سجل علی ،صبا قمر ہندوستان میں بہت سے مقبول ہیں انہیں وہاں کام سے کوئی نہیں روک سکتا۔پاکستان میں بھارتی فنکاروں کو جو عزت ا?فزائی کی جاتی ہے وہ اپنی مثال آپ ہے،

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...