ولی عہد محمد بن سلمان کا دورہ پاکستان انتہائی اہم، تاریخی برادرانہ تعلقات میں مزید اضافہ ہو گا: حافظ عبدالغفار روپڑی

ولی عہد محمد بن سلمان کا دورہ پاکستان انتہائی اہم، تاریخی برادرانہ تعلقات ...
ولی عہد محمد بن سلمان کا دورہ پاکستان انتہائی اہم، تاریخی برادرانہ تعلقات میں مزید اضافہ ہو گا: حافظ عبدالغفار روپڑی

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)جماعت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ حافظ عبدالغفار روپڑی نے کہا ہے کہ پاکستان اور سعودی عرب کی دوستی لازوال اور بے مثال ہے،پاکستانی عوام سعودی عرب جیسے مخلص دوست ملک پر فخر محسوس کرتے ہیں،سعودی ولی عہد کے دورے سے دونوں برادر ملکوں کے تعلقات مزید مستحکم اور مضبوط ہوں گے ۔

تفصیلات کے مطابق جامعہ القدس دالگراں چوک میں جماعت اہل حدیث پاکستان کے زیر اہتمام ’’پاک سعودیہ دوستی سیمینار‘‘ منعقد ہوا ۔سیمینار میں اہل حدیث علما سمیت کارکنوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ امیر جماعت اہل حدیث حافظ عبدالغفار روپڑی نے اپنے خطاب  میں سعودی  ولی عہد محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان کو انتہائی اہمیت کا حامل قرار دیتے ہوئے کہا کہ طویل عرصہ کے بعد اعلیٰ سطحی دورہ کے یقینی طور پر دور رس نتائج برآمد ہونگے اور دونوں ممالک کے مابین تاریخی برادرانہ تعلقات میں مزید اضافہ ہو گا۔انہوں نے کہا کہ سعودی عرب نے اس مشکل گھڑی میں جس فراخ دلی کے ساتھ دوستی نبھائی ہے، وہ ناقابل فراموش ہے،پاکستانی قوم اسے انتہائی قدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے،سرمایہ کاری سے دونوں ملکوں کے درمیان پہلے سے موجود تجارتی تعلقات میں مزید اضافہ ہو گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سعودی سرمایہ کاری پاکستانی کی ڈوبتی معیشت کو سنبھالنے کیلئے ریڑھ کی ہڈی ثابت ہو گی اور ترقی کا ایک نیا دور شروع ہو گا جس سے بے روزگاری، غربت اور ملکی اقتصادی بحران کو ختم کرنے میں مدد ملے گی۔

مولانا عبدالوہاب روپڑی،مولانا شکیل الرحمن ناصر ،مولانا سلمان شاکر، شاہد محمود جانباز، مولانا عبدالوحید شاہد، قاری فیاض اور دیگر رہنماؤں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان تعلقات ابتدا سے ہی لازوال ہیں،سعودی عرب نے پاکستان کے ساتھ سفارتی اور اقتصادی سطح پر جس انداز میں تعاون کیا ہے اس کی نظیر نہیں ملتی،  1965اور 71کی جنگ، سانحہ مشرقی پاکستان، 1998کے ایٹمی دھماکے، 2005کے زلزلے، 2010کے سیلاب، اسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ کیلئے پاکستانی جرنیل کا انتخاب، ہر سال لاکھوں حجاج کرام کی میزبانی، ڈوبتی ہوئی معیشت کو سہارا دینے کیلئے اربوں ڈالر کی خطیر رقم کے ساتھ بھرپور تعاون غرضیکہ ہر موقع پر سعودی عرب نے پاکستان کے ساتھ دوستی کا حق ادا کیا ہے۔ سعودی عرب کے جتنے بھی فرمانروا آئے انہوں نے پاکستان کے ساتھ اپنی خصوصی محبت کا اظہار کیا اور پھر عملی ثبوت بھی دیا۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے عوام کے دل ایک ساتھ دھڑکتے ہیں اور دونوں ممالک کو اپنا دوسرا گھر سمجھتے ہیں، پاکستان اور سعودی عرب یک جان دو قالب کی مانند ایک دوسرے کے ساتھ کھڑے ہیں،اسلام دشمنیں طاقتیں متعدد بار پاک سعودی دیرینہ تعلقات کو کسی نہ کسی طرح نقصان پہنچانے کی مذموم کوششیں کر چکا ہے مگر ہمیشہ ان کو منہ کی کھانی پڑی۔ انہوں نے کہا کہ آنیوالے وقت میں دونوں ممالک کے درمیان تعلقات مزید گہرے اور مضبوط ہونگے ۔ اس موقع پر دونوں ممالک کی سلامتی اور دین حنیف کی سربلندی کیلئے خصوصی دعائیں بھی کی گئیں۔ 

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور