سرعام نوجوانوں کو دعوتِ گناہ دینے پر خاتون ماڈل کے خلاف مقدمہ

سرعام نوجوانوں کو دعوتِ گناہ دینے پر خاتون ماڈل کے خلاف مقدمہ
سرعام نوجوانوں کو دعوتِ گناہ دینے پر خاتون ماڈل کے خلاف مقدمہ

  



ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روس کی 24سالہ کیرا میئر نامی ماڈل حال ہی میں 18ماہ قید کی سزا کاٹ کر جیل سے رہا ہوئی ہے۔ اس نے ٹریفک قانون کی خلاف ورزی کی تھی اور جب دو پولیس آفیسرز اس کا چالان کرنے لگے تو اس نے انہیں جنسی تعلق استوار کرنے کی پیشکش کر دی اور بدلے میں چالان نہ کرنے کو کہا تھا، جس پر اسے گرفتار کر لیا گیا اور عدالت سے اسے اٹھارہ ماہ قید کی سزا سنائی گئی۔ اب اسے ایک بار پھر گرفتار کر لیا گیا ہے اور اس بار بھی وہ سڑک پر ایسا شرمناک کام کرتی پھر رہی تھی کہ کوئی سوچ بھی نہیں سکتا۔

میل آن لائن کے مطابق اس بار کیرا میئر پولیس کی وردی پہن کر ماسکو کی سڑکوں پر پیدل گھوم رہی تھی اور ہر ملنے والے مرد کو دعوتِ گناہ دے رہی تھی۔ منظرعام پر آنے والی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ جیسے ہی کوئی مرد کیرا میئر کے قریب آتا وہ اپنا چھاتی برہنہ کر دیتی اور مرد کو انتہائی شرمناک پیشکش کر دیتی۔ اس پر پولیس نے اسے دوبارہ گرفتار کر لیا ہے۔ کیرا میئر کا کہنا ہے کہ ”اب کی بار میں نے یہ کام دراصل احتجاج کے طور پر کیا ہے۔ میں اس طریقے سے پولیس کی کرپشن کے خلاف اس طریقے سے احتجاج کر رہی تھی۔ میں لوگوں کو بتانا چاہتی تھی کہ ہماری پولیس کرپٹ ہے۔“رپورٹ کے مطابق کیرا میئر پر اس بار کم عمر لڑکوں کو دعوتِ گناہ دینے اور غیرقانونی طور پر پولیس کی وردی پہننے جیسے الزامات عائد کیے گئے ہیں اور امکان ہے کہ اس بار بھی اسے قید کی سزا ہو سکتی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس