17 سالہ لڑکی اپنی ماں کو سالگرہ کا خط دے کرنیند میں ہی مرگئی، خط میں کیا لکھا تھا؟ جان کر آپ بھی افسردہ ہوجائیں گے

17 سالہ لڑکی اپنی ماں کو سالگرہ کا خط دے کرنیند میں ہی مرگئی، خط میں کیا لکھا ...
17 سالہ لڑکی اپنی ماں کو سالگرہ کا خط دے کرنیند میں ہی مرگئی، خط میں کیا لکھا تھا؟ جان کر آپ بھی افسردہ ہوجائیں گے

  



لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) برطانیہ کے شہر سمر سیٹ میں ایک 17 سالہ لڑکی اپنی ماں کو سالگرہ کے موقع پر شب بخیر کہنے سے پہلے خط دے کر اپنے کمرے میں چلی گئی اور نیند میں ہی مرگئی۔ لڑکی کی ماں کا کہنا ہے کہ یہ خط اس کیلئے سب سے زیادہ قیمتی چیز ہے کیونکہ یہ بظاہر ایک کاغذ کا ٹکڑا ہے لیکن یہ وہ آخری بات ہے جو اس کی سب سے لاڈلی بیٹی نے اس کے ساتھ کی تھی۔

برطانیہ سے تعلق رکھنے والی تانیہ رسل اپنی 44 ویں سالگرہ کے موقع پر سپین میں چھٹیاں منانے کیلئے جانا چاہتی تھی لیکن اس نے آخری لمحے انجانے خدشے کے باعث اپنا ارادہ منسوخ کردیا۔ رات کو تانیہ اپنے گھر میں بیٹھی ہوئی تھی کہ اسی دوران اس کی 17 سالہ بیٹی جوہدی آئی، ماں کے ہاتھ میں ہاتھ سے لکھا خط پکڑا یا اور کان میں شب بخیر کہہ کر اپنے کمرے میں سونے چلی گئی۔ تانیہ کا کہنا ہے کہ اس کی بیٹی کو رات کو مرگی کا دورہ پڑا جو جان لیوا ثابت ہوا ۔ خاتون جو کہ اب 45 سال کی ہوچکی ہے نے اپنی بیٹی کا خط پہلی بار لوگوں کے ساتھ شیئر کیا ہے۔ تانیہ کا کہنا ہے کہ بظاہر یہ ایک خط کا ٹکڑا ہے لیکن یہ میرے جگر کے ٹکڑے کے آخری الفاظ ہیں۔

جوہدی نے اپنی ماں کو لکھے گئے خط میں لکھا ” ماں ، آپ کو سالگرہ کی بہت بہت مبارکباد، میں آپ سے ہمیشہ پیار کرتی رہوں گی اور اتنا پیار کروں گی کہ کوئی اس کا تصور بھی نہیں کرسکتا، آپ کے ساتھ میرا یہ سال بھی بہترین گزرا، آپ دنیا کی سب سے پیاری، خیال کرنے والے اور اپنے بچوں کو سمجھنے والی ماں ہیں، آپ کے وجود سے مجھے مسرت ، طاقت اور حفاظت ملتی ہے“۔

تانیہ نے بتایا کہ اس کی بیٹی نے اپنے خط میں اس کے ساتھ ہلکا پھلکا مذاق بھی کیا اور اسے 60 سال کی قرار دیا۔ ’ میں نے خط جوہدی کی موجودگی میں ہی پڑھا اور مجھے یہ پڑھ کر اتنا پیار آیا کہ میں نے اسے گلے لگالیا، لیکن مجھے یہ بالکل اندازہ نہیں تھا کہ میری اپنی بیٹی سے یہ آخری ملاقات ہے‘۔

فوٹو: دی سن

مزید : ڈیلی بائیٹس