معلمات کی تنخواہیں دبانے پر جیمز سکول سسٹم انتظامیہ کیخلاف انکوائری کا حکم

معلمات کی تنخواہیں دبانے پر جیمز سکول سسٹم انتظامیہ کیخلاف انکوائری کا حکم

  



ملتان (سٹاف رپورٹر) ڈپٹی کمشنر / ایڈمنسٹر یٹرڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی ملتان نے3 معلمات کو تنخواہیں نہ دینے کی شکایات پر اسسٹنٹ کمشنر ہیڈ کوارٹرز کو جیمزسکول سسٹم کی انتظامیہ کے خلاف انکوائری کا حکم دے دیا ہے۔ اس سلسلے میں ڈسٹرکٹ رجسٹرنگ اتھارٹی ملتان کی(بقیہ نمبر42صفحہ7پر)

میٹنگ میں چیف ایگزیکٹو آفیسر ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹی /سیکرٹری رجسٹرنگ اتھارٹی ملتان نے یہ معاملہ پیش کیا جس پر غور کے بعد ڈپٹی کمشنر / ایڈمنسٹریٹرڈسٹرک ایجوکیشن اتھارٹی ملتان نے معلمات کو تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر تشویش ظاہر کی اوراس مسئلے کو سیریس قرار دیتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنر ہیڈ کوارٹرز سے انکوائری کرانے کا فیصلہ کیا۔جیمز سکول سسٹم کے ڈائریکٹر غضنفر عباس کی طرف سے جن سابق معلمات کی تنخواہیں دبائی گئی ہیں‘ ان میں زکریا ٹاؤن بوسن روڈ کی رہائشی معلمہ ناہید خورشید‘ فاروق پورہ کی رہائشی نیک بخت اور کینٹ کی رہائشی سارہ ناظم شامل ہیں جو اپنا حق لینے کے لئے جیمز سکول سسٹم اور ایجوکیشن دفاتر کے چکر پر چکر لگا کر ہلکان ہو گئیں مگر انہیں تاحال انصاف نہیں مل سکا۔ اس سلسلے میں ڈائریکٹر جیمز سکول سسٹم غضنفر عباس کو نوٹس بھی جاری کر دیا گیا ہے۔اس حوالے سے رابطہ کرنے پر محکمہ تعلیم کے حکام نے بتایا کہ جیمز سکول سسٹم کے ڈائریکٹر کی طرف سے معلمات کی تنخواہیں دبانے کی شکایات نئی نہیں ہیں۔اب ڈپٹی کمشنر ملتان نے سخت نوٹس لے کر ایکشن لیاہے اور وہ میرٹ پراس معاملے کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔

انکوائری کا حکم

مزید : ملتان صفحہ آخر