ملتان: بچوں کی مضر صحت اشیا بنانے پرالبراق و النور فوڈز سیل

ملتان: بچوں کی مضر صحت اشیا بنانے پرالبراق و النور فوڈز سیل

  



ملتان (سٹاف رپورٹر) ملتان کی فوڈ سیفٹی ٹیم نے مضر صحت اجزاء سے بچوں کی اشیاء تیار کرنے،جعلی لیبلنگ،صفائی کے ناقص انتظامات پر البراق فوڈز پرائیویٹ (بقیہ نمبر45صفحہ7پر)

لمیٹڈ اور النور فوڈز کوسیل کردیا۔اسی طرح میٹ سیفٹی ٹیموں نے مردہ مرغیوں کی موجودگی،جرمانے کی عدم ادائیگی پر شہبازانصاری پولٹری شاپ جبکہ ڈی جی خان میں مضر صحت گوشت کی فروخت پر جہانگیر بیف اورخالد چکن شاپ کو سربمہر کیا۔مزید برآں لائسنس کی عدم دستیابی،حشرات کی بہتات،غیر معیاری انتظامات پر بہاولنگر میں داتا بیکرز اور ڈی جی خان میں زیتون بیکرز کوسیل کیا۔مظفر گڑھ کی ڈیری سیفٹی ٹیموں نے غیر معیاری دودھ کی فروخت پر معین امین ملک شاپ جبکہ دودھ سے کریم الگ کرنے اور لائسنس کی عدم دستیابی پر پیر عاشق بخش کریم سیپریشن یونٹ کو سربمہر کیا۔مزید برآں بہاولپور میں جعلی دودھ تیار کرنیوالا مکروہ دھندہ کرنیوالوں کیخلاف کارروائی کرتے ہوئے ظفر اقبال نامی فیکٹری کو پکڑ لیاگیا۔چیکنگ کے دوران ویجیٹیبل آئل، وے پاؤڈر اور مضر صحت کیمیکلز سے دودھ تیار کیا جارہا تھا۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی عرفان میمن کا کہنا تھا کہ مصنوعی طریقے سے دودھ تیار کرنا سنگین جرم ہے۔علاوہ ازیں فوڈ سیفٹی ٹیموں نے ملتان،بہاولپو ر اور گردونواح میں کارروائیوں کے دوران غیر معیاری سٹوریج،ملازمین کے میڈیکلزکی عدم دستیابی اور حشرات کی بناء پر 48,000کے جرمانے عائد کیے۔مظفر گڑھ،ڈی جی خان اور رحیم یارخان کے علاقوں میں پنجاب فوڈ اتھارٹی قوانین کی خلاف ورزیوں پر 54,000کے جرمانے عائد کیے گئے۔ جنوبی پنجاب کے مختلف علاقوں میں چیکنگ کے دوران825کلووے پاؤڈر،512کلو ویجیٹیبل آئل ضبط جبکہ بھاری مقدار میں حشرات زدہ مٹھائیاں، زائد المیعاد اشیائے خورونوش،ملاوٹی مصالحہ جات اور مضر صحت خوراک کو تلف کیا گیا۔ مزید برآں فوڈ سیفٹی ٹیموں نے حفظانِ صحت کے اصولوں کی خلاف ورزیوں پر متعدد فوڈپوائنٹس کو وارننگ نوٹس بھی جاری کیے۔

فوڈز سیل

مزید : ملتان صفحہ آخر